اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوترش کی یمن میں فوجی کارروائیوں میں شدت کی مذمت

جمعرات مئی 14:31

اقوام متحدہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوترش نے یمن میں فوجی کارروائیوں میں شدت کی مذمت کی ہے۔فرانسیسی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کی قیادت میں قائم فوجی اتحاد نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ اس کی طرف سے فضائی حملوں میں یمن کے دارالحکومت میں صدارتی رہائش کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

ان حملوں میں چھ افراد ہلاک اور درجنوں کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔اس کے بعد سعودی عرب کی مسلح افواج نے دارالحکومت ریاض کو نشانہ بنانے کے لئے داغے گئے دو بیلسٹک میزائل ہدف تک پہنچنے سے قبل ناکارہ بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔عالمی ادارے کے سربراہ کے ترجمان سٹیفن دوجارک کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سیکرٹری جنرل نے یمن کی تازہ ترین صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور تمام متعلقہ فریقوں سے اپیل کی ہے کہ وہ تشدد میں اضافے سے گریز کریں کیونکہ اس کے خطے کے امن پر منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ تمام فریق عام شہریوں کے تحفظ کے حوالے سے بین الاقوامی قوانین کا احترام یقینی بنائیں۔واضح رہے کہ یمن کے تنازعہ میں اب تک دس ہزار افراد ہلاک اور لاکھوں زخمی ہوچکے ہیں۔جنگ کے باعث یمن کے لاکھوں باشندے قحط کے قریب پہنچ چکے ہیں جو اقوام متحدہ کے مطابق بدترین انسانی المیہ ہوگا۔