الیکشن کمیشن کی جانب سے ترقیاتی کام تبادلوں اور بھرتیوں پر پابندی کے معاملے پر اسلام آباد ہائی کورٹ نے فیصلہ محفوظ کرلیا

جمعرات مئی 16:44

الیکشن کمیشن کی جانب سے ترقیاتی کام تبادلوں اور بھرتیوں پر پابندی کے ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) اسلام آباد ہائی کورٹ کے ڈویژنل بنچ نے الیکشن کمیشن کی جانب سے ترقیاتی کام تبادلوں اور بھرتیوں پر پابندی کے معاملے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

(جاری ہے)

وفاق اور صوبوں کی جانب سے الیکشن کمیشن کے 11اپریل کے نوٹیفکشن کے خلاف دائر درخواست پر جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل بنچ نے سماعت کی،جب سماعت شروع ہوئی درخواست گزار کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے استدعا کی کہ 11اپریل کا الیکشن کمیشن کا نوٹیفکیشن غیر قانونی ہے۔

الیکشن کمیشن نے حکومت کرنے کے دو ماہ کے اختیارات ختم کردئیے۔۔الیکشن ایکٹ کے مطابق الیکشن کمیشن الیکشن شیڈول جاری ہونے کے بعد اس طرز کا نوٹیفکیشن جاری کرسکتا ہے۔۔الیکشن کمیشن کی جانب سے اس طرح کے اقدام غیر قانونی قرار دیئے جائیں۔بعد ازاں عدالت نے چاروں صوبوں کی درخواست پر دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔