لیبر کورٹ حب کے جج جعفر خان مینگل نے چائنا پاور جنریشن پرائیویٹ کمپنی اور حبیب اسٹیل مل کو رجسٹریشن اور لیبر سیفٹی پر عمل درآمد نہ کرنے پر جرمانے کی سزائیں سنادی

جمعرات مئی 18:44

اوتھل (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) لیبر کورٹ حب کے جج جعفر خان مینگل نے چائنا پاور جنریشن پرائیویٹ کمپنی اور حبیب اسٹیل مل کو رجسٹریشن اور لیبر سیفٹی پر عمل درآمد نہ کرنے پر جرمانے کی سزائیں سنادی تفصیلات کے مطابق لیبر کورٹ حب کے جج جعفر خان مینگل نے یہ فیصلہ محکمہ محنت و افرادی قوت کے ڈپٹی ڈائریکٹر فدا احمد شاہوانی کی مدعیت میں چائنا جنریشن پرائیویٹ کمپنی اور حبیب اسٹیل مل کے خلاف دائر کیسز کی سماعت کے موقع پر دیا۔

لیبر ڈیپارٹمنٹ کے ڈپٹی ڈائریکٹر فدا احمد شاہوانی نے سماعت کے دوران موقف اختیار کیا کہ مذکورہ کمپنیاں لیبر ڈیپارٹمنٹ کے ساتھ رجسٹرڈ نہیں ہیں بلکہ دونوں کمپنیاں رجسٹریشن کے بغیر کام کررہی ہے۔اس کے علاوہ کمپنیوں میں لیبر کے تحفظ کے حوالے سے کسی قسم کی سیفٹی کے انتظامات موجود نہیں اسی لئے مزدور حادثات کا شکار ہو کر لقمہ اجل بن جاتے ہیں جبکہ حبکو پاور کمپنی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مزدور کی ہلاکت کا واقعہ حبکو کمپنی میں نہیں بلکہ چائنا جنریشن پرائیویٹ کمپنی میں رونما ہوا ہے جس کی ذمہ دار چائنا جنریشن کمپنی پر ہے۔

(جاری ہے)

فریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد لیبر کورٹ نے چائنا پاور جنریشن پرائیویٹ کمپنی اور حبیب اسٹیل مل کو رجسٹریشن نہ کرانے اور لیبر سیفٹی پر عمل درآمد نہ کرنے پر جرمانے کی سزا سنائی، واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے حبیب اسٹیل مل میں لفٹر گرنے سے ایک مزدور جاں بحق جبکہ 3 زخمی ہوئے تھے اس کے علاوہ حب کو پاور کمپنی میں کام کرنے والا مزدور بھی مکسچر مشین کی زد میں آکر جاں بحق ہوگیا تھا جس کے بعد ڈپٹی ڈائریکٹر لیبر ڈیپارٹمنٹ فدا احمد شاہوانی کی جانب سے کاروائی کرکے مذکورہ کمپنیوں کے خلاف کیس دائر کیا تھا۔