لبنان وملائیشیا میں جمہوری کامیابیاں خوش آئند، لبنانی عوام نے ووٹ کی طاقت سے استعماری عزائم کو خاک میں ملادیا‘ امریکہ استعماری ملک، دنیا کا اعتماد کھوچکا، مسلم ممالک بنیادی انسانی حقوق کا تحفظ کرکے دنیا کا مقابلہ کرسکتے ہیں

قائد ملت جعفریہ پاکستان سا جد نقوی کی وفود سے گفتگو

جمعرات مئی 17:30

راولپنڈی /اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کی لبنان اور ملائشیا میں جمہوری اتحادکی میابی پر مسلم ملکو ں کی عوام کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ لبنان میں جمہوری اتحادی قوتوں کی بڑی کامیابی نے اسرائیلی ناپاک عزائم کو خاک میں ملادیا ، تمام اسلامی ممالک میں بنیادی انسانی حقوق کو اگر اہمیت دی جائے اور باہمی احترام کا رشتہ قائم رہے تو نہ صرف مثبت تبدیلیاں رونما ہونگی بلکہ اغیار کی سازشیں بھی ناکام ہونگی، امید ہے ملائشیا کی نومنتخب حکومت اتحاد امت کیلئے اپنی کاوشیں بروئے کار لائے گی، دنیا واضح ہوگیا کہ امریکہ استعماری قوت، دنیا کا اعتماد کھونے والا امریکہ اسرائیل کے ناجائز وجود کے تحفظ کیلئے کسی بھی حد تک جاسکتاہے۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوںنے اپنے تہنیتی پیغام اور مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیاجنہوںنے قائد ملت جعفریہ پاکستان سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ لبنان کے عام انتخابات میں جمہوری قوتوں کی واضح کامیابی عوام کے ووٹ کے طاقت کا نہ صرف ثبوت ہے بلکہ یہ لبنانی عوام کی بڑی کامیابی بھی ہے جو اسرائیل کے ناپاک عزائم کے سامنے ایک سیسہ پلائی دیوار کی مانند ہے جس نے اپنے ووٹ سے واضح کردیا کہ عوام اپنی خود مختاری، سلامتی اور ملکی مفادات پر کسی شے کو مقدم نہیں سمجھتے۔

علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ حالیہ کامیابی کے بعد لبنانی جمہوری قوتوں کو ایک بڑا موقع ملاہے کہ وہ اسرائیلی و صیہونیت کے عزائم کو ناکام بنائیں اور اپنی خود مختاری سلامتی اور ملکی مفادات کے مطابق فیصلے کریں ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر عوامی طاقت کا ایسا انداز جس طرح لبنان میں پارلیمانی و جمہوری طریقے سے اپنایا گیا اسے اپنایا جائے اور اسی طریقے سے انسانی بنیادی حقوق و مساوات کی راہ اپنائی جائے تو کوئی وجہ نہیں مسلم ممالک میں مثبت تبدیلیاں رونما نہ ہوں، عوامی طاقت کے ذریعے ہی بیرونی و استعماری قوتوں کا نہ صرف راستہ روکا جاسکتا ہے بلکہ بنیادی حقوق کے ساتھ ساتھ ملکی مفادات بھی تبھی مقدم رکھے جاسکتے ہیں اور دفاع مضبوط کیا جاسکتاہے۔

انہوںنے ملائشیامیں ایک بڑے عرصہ بعد تبدیلی کو بھی خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہاکہ اتحادکے نتیجہ میں بڑی کامیابی حاصل کی ہے جس پر ملائیشیائی عوام اورکامیاب ہونے والے اتحاد کومبارکباد پیش کرتے ہیں ، ان کا کہنا تھا کہ اس جمہوری تبدیلی کے بعد امید کرتے ہیں وہ معاشرے میں باہمی مساوات، احترام کے کلچر کے فروغ کیساتھ ساتھ اتحاد امت کیلئے بھی وہ کردار ادا کریںگے جو اس وقت پوری اسلامی دنیا کی ضرورت ہے۔

مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ امریکی صدر کی جانب سے ایران و عالمی ایٹمی قوتوں کے درمیان جوہری معاہد ے سے دستبرداری استعماریت اوربوکھلاہٹ کا نتیجہ ہے۔انہوںنے کہاکہ امریکہ کے حالیہ اقدام سے عالمی اعتماد کھوبیٹھا ہے ، ٹرمپ کا فیصلہ بین الاقوامی قوانین کی نہ صرف خلاف ورزی بلکہ واضح ہوگیا یہ امریکہ میں استعماریت کی تمام کیفیات موجود ہیں اور غاصب اسرائیل کے ناجائز وجود کے تحفظ کیلئے کسی بھی حد تک جاسکتاہے۔