روسی صدر ولادی میر پوتن نے سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کر لیا

جمعرات مئی 20:08

ماسکو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) روسی صدر ولادی میر پوتن نے سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کر لیا۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق روس کے صدر ولادی میر پوتن نے، امریکہ کے ایران کے ساتھ جوہری سمجھوتے سے نکلنے کے فیصلے کااعلان کرنے کے بعد سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کیا۔کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف نے اخباری نمائندوں کے لئے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ اجلاس میں امریکہ کے ایران کے ساتھ طے شدہ سمجھوتے سے علیحدہ ہونے کے فیصلے پر غور کیا گیا۔

(جاری ہے)

بیان کے مطابق اجلاس میں اس فیصلے پر تشویش کا اظہار کیا گیا اور ایک دفعہ پھر اس سمجھوتے کی اہمیت پر زور دیا گیا۔اجلاس میں وزیر اعظم دمتری میدویدیف ، وزیر خارجہ سرگے لوروف، وزیر دفاع سرگے شوئے گو ، وزیر داخلہ ولادی میر کولوکولسٹیف، رشئین سکیورٹی سروسز کے سربراہ الیگذینڈر بورٹینی کوف، رشئین فیڈریشن کونسل کے سربراہ والنٹین ماتوی ینکو، دٴْوما کے سربراہ ویاچسلاو وولو، سیکیورٹی کونسل کے سیکرٹری نکولائے پاتروشیو نے بھی شرکت کی۔