اعلان شدہ راؤنڈ اباؤٹ انٹرچینج نقشے میں تبدیلی نہ کی گئی تو تعمیراتی کام کو روکوا کر سانحہ ماڈل ٹاؤن کی یاد تازہ کرینگے،

کروڑوں روپے کی کمرشل اراضی پر حکومت کا زبردستی قبضہ برداشت نہیں کریںگے ، اراضی مالکان کی مشترکہ پریس کانفرنس

جمعرات مئی 20:24

بٹ خیلہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) سوات ایکسپریس وے پل چوکی انٹرچنیج اراضی مالکان نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کی طرف سے اعلان شدہ راؤنڈ اباؤٹ انٹرچینج نقشہ میں اگر تبدیلی کی گئی تو تعمیراتی کام کو روکوا کر سانحہ ماڈل ٹاؤن کی یاد تازہ کریں گے ، کروڑوں روپے کی کمرشل اراضی پر حکومت کا زبردستی قبضہ برداشت نہیں کریںگے ، ایف ڈبلیو او حکام بھی عوامی مشکلات کو مد نظر رکھ کر مالکان اراضی اور حکومت کے درمیان فیصلہ تک انتظار کریں ، ایس ایم بی آر کمیٹی کی یکطرفہ رپورٹ کو مسترد کرتے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار جمعرات کو اراضی مالکان امجد خان، فضل مولا، رشید خان ، فواد خان ، محمد اسرار ، محمد سیاب اور دیگر نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوںنے کہا کہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا نے مالکان سے ملاقات میں راؤنڈ اباؤٹ انٹر چینج کی تعمیر کی منظوری دی ہے مگر ان کی طرف سے تشکیل شدہ ایس ایم بی آر کمیٹی نے خودساختہ رپورٹ تیار کی ہے جسے ہم مسترد کرتے ہیں ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ اسلام آباد اوررشکئی انٹر چنیج بھی راؤنڈ اباؤٹ طرز پر ہے اس لئے پل چوکی انٹرچینج کو بھی اسی نقشہ پر تیار کرکے نقشہ کو مین روڈ سے غیر آبادکھیتوں کی طرف منتقل کیا جائے اگر ان کی زمین پر زبردستہ قبضہ کرانے کی کوشش کی گئی تو وہ بیوی بچوں سمیت سڑکوں پر نکل کر سانحہ ماڈل ٹاؤن کی یاد تازہ کریںگے،مگر اپنی جائداد پر زبردستہ قبضہ کو برداشت نہیں کریں گے ۔

متعلقہ عنوان :