پشاور، کم عمر بچھڑوں کو ذبح کرنے پر تہکال کے قصائیوں کی شامت، پندرہ قصائیوں کے دوکان سیل

بیس کم عمر بچھڑوں کا گوشت قبضے میں لیا گیا۔ گوشت کو یتیم خانے پہنچا دیا گیا

جمعرات مئی 21:44

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی نے کم عمر بچھڑوں کو ذبح کرنے کیخلاف ایکشن لیتے ہوئے تہکال میں بڑی کاروائی کی جس کے نتیجے میں بارہ قصائیوں کے دوکان سربہمر کئے گئے جبکہ بیس بچھڑوں کا گوشت قبضے میں لیکر یتیم خانہ پہنچا دیا گیا۔ ترجمان کے پی فوڈ اتھارٹی عطا اللہ خان کے مطابق عوامی شکایات سسٹم کے تحت موصول ہونی والی معلومات پر بروقت کاروائی کرتے ہوئے اسسٹنٹ ڈائریکٹر اسد علی نے ٹیم کے ہمراہ تہکال کا دورہ کیا تو قصائی فوڈ اتھارٹی کی ٹیم کو دیکھ کر دوکانیں چھوڑ کر بھاگ گئے۔

فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے معائنہ کیا تو تمام دوکانوں میں کم عمر بچھڑے ذبح کئے گئے تھے جبکہ کسی بھی ذبح شدہ جانور پر سرکاری مذبح خانے کا کوئی مہر موجود نہیں تھا۔

(جاری ہے)

جس کے بعد فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے کاروائی کرتے ہوئے بارہ دوکانوں سیل کرکے گوشت اپنے قبضے میں لیکر یتیم خانے پہنچا کر یتیم اور بے سہارا بچوں کو عطیہ کردیا۔ ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ اتھارٹی کے قائم ہوتے ہی کم عمر بچھڑوں کو ذبح کرنے پر پابندی عائد کردی گئی تھی۔

کم بچھڑوں کو ذبح کرنا نہ صرف جانوروں کے حقوق کی خلاف ورزی ہے بلکہ جانوروں کی نسل کشی کے مترادف ہے۔ اس کے علاوہ پشاور پولٹری اور ہوٹل ایسوایشن کیلئے کے پی فوڈ اتھارٹی میں ایک ترغیبی نشست کا انعقاد کیا گیا جس میں متعلقہ روزگاروں سے وابستہ افراد کو صفائی ستھرائی اور حفظان صحت کے اصولوں سے متعلق مختصر لیکچر دیا گیا اور ان کے مسائل بھی سنے گئے۔ اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر آپریشن شاہانہ شاکر کا تاجروں سے کہنا تھا کہ ان کے تعاون کے بغیر کے فوڈ اتھارٹی اپنا کام احسن طریقے سے نہیں نبھا سکتی اور اس مد میں ان کے تعاون کی ہمیشہ اتھارٹی مشکور رہی ہے۔

متعلقہ عنوان :