آئندہ مالی سال کے دوران تجارتی خسارے پر قابو پانے کے لیے ٹھوس حکمت عملی وضع کی جائے : لاہور چیمبر

جمعرات مئی 21:53

آئندہ مالی سال کے دوران تجارتی خسارے پر قابو پانے کے لیے ٹھوس حکمت عملی ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) لاہور چیمبر کے صدر ملک طاہر جاوید، سینئر نائب صدر خواجہ خاور رشید اور نائب صدر ذیشان خلیل نے حکومت پر زور دیا ہے کہ آئندہ مالی سال کے لیے تجارتی خسارے پر قابو پانے کے لیے ابھی سے ٹھوس حکمت عملی تشکیل دے، تجارتی خسارہ ایک اہم معاشی اشارہ ہے ، اس میں اضافہ نہ صرف معاشی مشکلات پیدا کرتا ہے بلکہ غیرملکی سرمایہ کاروں کا اعتماد بھی کمزور کرتا ہے۔

ایگزیکٹو کمیٹی رکن ادیب اقبال شیخ کی سربراہی میں وفد سے گفتگو کرتے ہوئے لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے کہا کہ برآمدات میں بہتری کے باوجود رواں مالی سال کے پہلے نو ماہ میں تجارتی خسارہ 27ارب ڈالر سے تجاوز کرگیا، خدشہ ہے کہ اس مالی سال کے اختتام تک یہ تیس ارب ڈالر کے لگ بھگ ہوجائے گا جو لمحہ فکریہ ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ برآمدات میں اضافے کے لیے حکومت اور برآمد کنندگان دونوں کو افریقہ ، ملائشیا اور وسطیٰ ایشیا کی طرف خصوصی توجہ دینی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ جن ممالک کی منڈیوں تک پاکستانی مصنوعات کی خاطر خواہ رسائی نہیں ان ممالک کے ساتھ ایسے تجارتی معاہدے کیے جائیں جو پاکستان کی برآمدات بڑھانے میں معاون ثابت ہوں۔ ادیب اقبال شیخ نے کہا کہ ٹیکسٹائل کے شعبے کو مستحکم کرکے اور مراعات دیکر برآمدات میں تیزی سے اضافے کا خواب پورا کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل انڈسٹری ملکی معیشت کو مستحکم کرنے میں اہم کردار ادا کرسکتی ہے۔