لاہور، احد چیمہ و دیگر شخصیات کی اراضی کو فائدہ پہنچانے کے لیے سرکاری نہری کھال مسماری کیخلاف درخواست پر جاری حکم امتناعی میں 4 ستمبر تک توسیع

جمعرات مئی 22:15

لاہور، احد چیمہ و دیگر شخصیات کی اراضی کو فائدہ پہنچانے کے لیے سرکاری ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے احد چیمہ و دیگر شخصیات کی اراضی کو فائدہ پہنچانے کے لیے سرکاری نہری کھال مسماری کیخلاف درخواست پر نہری پانی کے کھال کی مسماری کے خلاف جاری حکم امتناعی میں 4 ستمبر تک توسیع کردی ۔ عدالت نے محکمہ آبپاشی سے نہری کھال سے متعلق تحریری جواب طلب کر لیا ۔ جسٹس شاہد وحید نے ٹیڑھا پنڈ ڈی ایچ اے کے رہائشی شہریار کی درخواست پر سماعت کی ۔

محکمہ ریونیو کی طرف سے نہری کھال بارے جواب داخل کرادیا گیا ۔ اسسٹنٹ کمشنر نے عدالت کو بتایا کہ نہری کھال بند ہونے کی وجہ سے سڑک بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ درخواست گزار کی طرف سے عامر سعید راں ایڈووکیٹ پیش ہوئے۔

(جاری ہے)

درخواست گزار کا موقف تھا کہ درخواست گزار کی ٹیڑھا پنڈ میں 73 ایکڑ اراضی کو سرکاری نہری پانی کا کھال سیراب کرتا ہے، علاقے میں احد چیمہ و دیگر شخصیات نے اراضی خرید رکھی ہے، ان شخصیات کی اراضی کو فائدہ پہنچانے کے لیے سرکاری کھال مسمار کرکے سڑک بنائی جارہی ہے، قانون کے مطابق زرعی اراضی کو پانی فراہم کرنے والے کھال کو مسمار نہیں کیا جا سکتا ہے، اسسٹنٹ کمشنر نے بتایا کہ سرکاری نہری پانی کا کھال کافی عرصے سے خشک پڑا ہے، ترقیاتی کاموں کیلئے کھال کو مسمار کیا جارہا ہے،،عدالت نے سرکاری نہری کھال پر حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔