شیڈول کے مطابق کماد کو پانی فراہم نہ کیا جائے تو اس سے فصل متاثر ہونے کا خدشہ ہوسکتا ہے،ماہرین زراعت

جمعہ مئی 11:50

فیصل آباد۔11 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) ماہرین زراعت نے کماد کے کاشتکاروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ وسط مئی کے بعد سے جون کے آخر تک کماد کی فصل کو پانی کی کمی نہ آنے دیں تاکہ فصل کی بڑھوتری کا عمل بہتر طریقے سے جاری رہے۔ انہوںنے بتا یا کہ وسط مئی کے بعد اور ماہ جون کے دوران موسم گرما کی شدت کے باعث کماد کی فصل کو پانی کی اشد ضرورت ہوتی ہے لہٰذا اگر شیڈول کے مطابق کماد کی فصل کو پانی فراہم نہ کیا جائے تو اس سے فصل متاثر ہونے کا خدشہ رہتا ہے ۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہا کہ کماد کی اچھی پیداوار بروقت آبپاشی سے منسلک ہے ۔انہوںنے کہا کہ جون کے مہینے کے دوران کماد کی فصل کو 10سے 12روز کے وقفہ کے دوران ضرورت کے مطابق پانی دیا جائے اور آبپاشی کے ساتھ ساتھ جڑی بوٹیوں کی تلفی، گوڈی ، نلائی پر بھی خاص توجہ مرکوز رکھنی چاہیے ۔انہوںنے کہا کہ کماد کی فصل کو نائٹروجنی کھاد کی بھی بروقت ضرورت ہوتی ہے لہٰذا جون کے آخر میں کماد کی فصل کو کھاد کی تیسری قسط ڈالی جائے تاکہ فصل کی بڑھوتری بھر پور طریقے سے جاری رہے ۔انہوںنے کہا کہ اس سلسلہ میں کسی مشاورت یا رہنمائی کیلئے محکمہ زراعت کے قریبی دفتر یا فری ایگریکلچرل ہیلپ لائن سے بھی رابطہ کیا جا سکتا ہے۔

متعلقہ عنوان :