سٹرابری کی فصل سے جڑی بوٹیوں کی تلفی یقینی بنائیں،زرعی ماہرین

جمعہ مئی 15:28

سلانوالی۔11 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) ماہرین زراعت نے کہاہے کہ سٹرابری کی فصل اس وقت بڑھوتری کے اہم مرحلہ سے گزررہی ہے اس لئے کاشتکار فصل کی بہتر دیکھ بھال اور برداشت سے فی ا یکڑزیادہ پیداوار اور منافع حاصل کرسکتے ہیں ،،پاکستان میں سٹرابری کی پیداوار 300سے 400کلوگرام فی ایکڑہے ،سٹرابری کی اچھی پیداوارلینے کیلئے ضروری ہے کہ کہ کھیت میں موجود جڑی بوٹیاں مسلسل تلف کی جائے، یعنی ہر 10سے 12دن کے وقفے سے گوڈی کی جائے، پودوں کی جڑیں بہت چھوٹی ہوتی ہیں اس لئے ہمیشہ ہلکی گوڈی کرنی چاہئے تاکہ گوڈی کے دوران جڑوں کونقصان ہونے کااندیشہ نہ رہے، سٹرابری کی فصل کوبڑھوتری اورپھل لگنے کے مرحلہ پرضرورت کے مطابق 7سی10دن کے وقفہ سے پانی لگائیں، اگر پانی صحیح مقدار اور صحیح وقت پرنہ لگایاجائے توپودوں کی نشوونمامتاثرہوتی ہے اورپھل بھی کم لگتاہے، پھول اورپھل لگنے کے مرحلہ پر موسم اورزمین کی خاصیت کومدنظر رکھتے ہوئے 4سے 5دن کے وقفہ سے آبپاشی کی جائے تاکہ پھلوں کی نشوونمااچھی طرح سے ہوسکے پانی اتنی مقدارمیں دیں کہ کھیلیوں پرنہ چڑھنے پائے ۔

متعلقہ عنوان :