مسئلہ کشمیر کا پرامن حل اقوام متحدہ کی کشمیر قرار دادوں کی روشنی میں استصواب رائے میں ہی مضمر ہے ‘مقبوضہ کشمیر

میں بھارتی مظالم و جبر کے باوجود بھارت کشمیریوں کا جذبہ حریت نہیں دبا سکا ہے آزاد کشمیر کے وزیر قانون انصاف و پارلیمانی امور حاجی جاوید اختر چوہدری نے وکلاء کے وفد سے گفتگو

جمعہ مئی 18:08

مظفرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) آزاد کشمیر کے وزیر قانون انصاف و پارلیمانی امور حاجی جاوید اختر چوہدری نے وکلاء کے وفد سے ملاقات کے دوران کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کا پرامن حل اقوام متحدہ کی کشمیر قرار دادوں کی روشنی میں استصواب رائے میں ہی مضمر ہے ۔ انہوں نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ ظلم و جبر کے باوجود بھارت کشمیریوں کا جذبہ حریت نہیں دبا سکا ۔

(جاری ہے)

کشمیریوں کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں کسی بھی قسم کی کوئی دہشت گرد ی نہیں ہو رہی ہے ۔ انہوں نے باور کرایا کہ بھارتی پراپیگنڈہ کشمیریوں کو ان کی منزل مقبوضہ کشمیر کی بھارتی تسلط سے آزادی سے دور نہیں کر سکتا۔ درحقیقت مودی سرکارمقبوضہ کشمیر میں سنگین جنگی جرائم کی مرتکب ہو رہی ہے ۔ کشمیر ی مسئلہ کشمیر کے اصل فریق ہیں لہذا ان کی شمولیت کے بغیر مسئلہ کشمیر کا پائیدار حل نہیں نکل سکتا۔