مغرب نے انٹر نیٹ کے ذریعے نئی نسل کے اخلاق پر حملہ کیا ہے‘والدین اپنے بچوں کو انٹر نیٹ کے حوالے نہ کریں بلکہ گھر میں موجود بچو ںکیلئے وقت نکالیں ‘انہیں مکمل طور پر انٹر نیٹ کے حوالے نہ کریں ‘زندہ قومو ںکی ریاست اپنے نو نہالوں کی پرورش کرتی ہے لیکن ہماری ریاست ابھی اس قابل نہیں

امیر جماعت اسلامی آزادکشمیر و گلگت بلتستان ڈاکٹر خالد محمود خان کا تقریب سے خطاب

جمعہ مئی 18:18

راولاکوٹ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) امیر جماعت اسلامی آزادکشمیر و گلگت بلتستان ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا ہے کہ مغرب نے انٹر نیٹ کے ذریعے نئی نسل کے اخلاق پر حملہ کیا ہے ۔والدین اپنے بچوں کو انٹر نیٹ کے حوالے نہ کریں بلکہ گھر میں موجود بچو ںکیلئے وقت نکالیں اور انہیں مکمل طور پر انٹر نیٹ کے حوالے نہ کریں ۔زندہ قومو ںکی ریاست اپنے نو نہالوں کی پرورش کرتی ہے لیکن ہماری ریاست ابھی اس قابل نہیں ۔

ان خیالات کااظہار انہو ںنے الخدمت فائونڈیشن کے زیر انتظام قائم کردہ آغوش سنٹر میں "ایک شام آغوش کے نام" سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ ہر سال آغوش سنٹر کی پیش رفت عوام کے سامنے رکھی جاتی ہے ۔

(جاری ہے)

خطہ پونچھ کے لوگوں کے دل بہت وسیع ہیں اگر عوام آغوش میں زیر کفالت بچوں کی سرپرستی کریں تو الخدمت فائونڈیشن یہاں سے فارغ ہو کر کسی دوسری جگہ آغوش سنٹر قائم کرے ۔

تقریب میں آل آزادکشمیر انجمن تاجران کے سپریم ہیڈ سردار عبدالنعیم خان، لبریشن فرنٹ کے ضلعی صدر حاجی ابراہیم خان، امیر جماعت اسلامی ضلع پونچھ سردار سجاد افضل ،سردار ممتاز خان، منیجر میزان بینک ظہیر قدیر ، سابق امیر ضلع سردار زاہد رفیق ایڈووکیٹ ، غازی ملت پریس کلب کے صدر ملک اعجاز قمر، مالک گلف ایمپائر سردار شازیب شبیر ، نیپ کے رہنما سردار اظہر احمد کاشر، سردار محمدعار ف ضلع قاضی کے علاوہ ڈاکٹرز ، پروفیسرز ، صحافیو ں ، تاجروں ، سول سوسائٹی کے علاوہ عوام علاقہ نے کثیر تعداد میں شرکت کی ۔

تقریب سے امیر جماعت اسلامی ڈاکٹر خالد محمود کے علاوہ ، کمشنر پونچھ ڈوثیرن محمد حمید مغل ، ڈپٹی کمشنر پونچھ انصر یعقوب ، آغوش منیجمنٹ کمیٹی کے چیئرمین سردار وسیم خورشید، لبریشن فرنٹ کے رہنما سردار انور خان ،ایڈ منسٹریٹر ضلع کونسل سردار محمد ذاکر خان، ڈاکٹر محمد نواز خان، سماجی تنظیم باغبان کے صدر محمد رضوان ، عدیل اسحق ، آشان شوکت ، آغوش سنٹر کے انچارج سردار عدنان خورشید، سردار عبید زبیر اور دیگر نے خطاب کیا ۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آغوش منیجمنٹ کمیٹی کے چیئرمین سردار وسیم خورشید نے کہا کہ الخدمت فائونڈیشن کے زیر انتظام آغوش سنٹر میں آرفن بچے زیر کفالت ہیں ۔ انہو ں نے کہاکہ زلزلہ 2005کے بعد ادارے کے قیام کافیصلہ کیاگیا ۔ آغوش کئیر پروگرام کے تحت پہلا ادارہ اٹک میں قائم کیاگیا جبکہ دوسرا ادارہ راولاکوٹ میں قائم کیاگیا ۔ادارہ کا مقصد آرفن بچوں کو معاشرے کا کار آمد شہری بنانا تھا ، آغوش سنٹر میں زیر کفالت بچوں کو کیڈٹ جیسی سہولیات دستیاب ہیں ۔

اللہ کی راہ میں جو خرچ کرتا ہے اس کا مال کبھی کم نہیں ہوتا ۔ اس وقت آغوش سنٹر میں 50بچے زیر کفالت ہیں انہوں نے مخیر حضرات سے اپیل کی کہ وہ بڑھ چڑھ کر آغوش سنٹر میں زیر کفالت بچوں کی پر ورش کا ذمہ لیں ۔ انہوں نے بتایا کہ آغوش سنٹر کے سالانہ اخراجات تقریباً65لاکھ روپے ہیںجو کہ الخدمت فائونڈیشن اور مخیر حضرات کے تعاون سے پورے کیے جاتے ہیں۔

انہوں نے تقریب میں آنے والے تمام مر د وخواتین کا شکریہ ادا کیا۔ تقریب میں مختلف شخصیات اور خواتین و حضرات کی طرف سے تقریباً35لاکھ روپے کا اعلان کیاگیا جو آغوش کا نمائندہ قسط وار وصول کرے گا ۔ تقریب کے پہلے حصے میں آغوش سنٹر میں زیر کفالت بچوں نے ٹیبلو ، تقاریر ، ملی نغمے اور ترانے بھی پیش کیے ۔تقریب کے اختتام پر شرکاء تقریب کیلئے عشائیہ بھی دیاگیا ۔