چیئرمین نیب کوشرم سے پانی پانی ہوجانا چاہیے تھا

آج ہمیں ان کی جگہ صرف پانی کا گڑھا نظرآتا، کیونکہ یہ اتنی شرمندگی کی بات ہےکہ ایک ذی شعور شخص مفروضے کو جواز بنا کرنوٹس جاری کردے۔سینئرصحافی مجیب الرحمن شامی

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ جمعہ مئی 17:37

چیئرمین نیب کوشرم سے پانی پانی ہوجانا چاہیے تھا
لاہور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11مئی 2018ء) : سینئر تجزیہ کار اور صحافی مجیب الرحمن شامی نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب کوشرم سے پانی پانی ہوجاناچاہیے تھا،آج ہمیں ان کی جگہ صرف پانی کا گڑھا نظر آتا، کیونکہ یہ اتنی شرمندگی کی بات ہے کہ ایک ذی شعور شخص مفروضے کو جواز بنا کرنوٹس جاری کردے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ایک اخباری تراشہ جس کی کوئی بنیاد نہیں تھی بلکہ کالم میں ایک تصوراتی کہانی کو موضوع بنایا گیا تھا۔

کالم سے نہ کالم نگار کی کوئی سمجھ بوجھ لگتی ہے اور نہ اس سے ہمارے فاضل نیب کے ذمہ دران کی کوئی سمجھ بوجھ لگتی ہے۔انہوں نے اس کالم نگار کو بلائے بغیر، اس سے کچھ پوچھے بغیر ایک پریس ریلیز جاری کردی ۔

(جاری ہے)

جس میں نوازشریف کا باقاعدہ نام لیکرانہیں ٹارگٹ کیا گیا کہ 4.9ارب ڈالر کی منی لانڈرنگ ہوئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ پیسے اسٹیٹ بینک کے ذریعے بھارت بھیجے گئے تھے۔

جبکہ دو سال پہلے بھی اس افسانے کا غبارہ پھٹ چکا تھا۔ہم نے فوری اس پروگرام میں نوٹس لیا تھا کہ یہ زیادتی ہوئی ہے۔المیہ یہ ہے کہ نیب کے اندر موجود لوگوں اور چیئرمین میں مالی معاملات کی کوئی بات چیت نہیں ہے۔ احتساب کا اتنا بڑا ادارہ ہے اگر وہاں یہ ہو توپھر ہم سرپیٹیں گے یا پھر جگر پیٹیں گے۔انہوں نے کہاکہ نوازشریف بڑے پکے پیروں پرہیں۔

انہوں نے کہاکہ نیب نے جووضاحت کی ہے وہ پہلی پریس ریلیز سے بھی بدتر ہے۔ انہوں نے چیئرمین نیب کی پشاور تقریر پرردعمل میں کہاکہ اگر کوئی اور ہوتا توسخت الفاظ استعمال کرتا۔۔چیئرمین نیب یہ بات نہیں سمجھ رہے کہ ان سے غلطی ہوئی ہے۔انہوں نے ایک افسانے پرنوٹس جاری کیا ہے۔انہیں توخود ہی شرم سے پانی پانی ہوجانا چاچاہیے تھا آج ہمیں ان کے ہاں صرف پانی کا گڑھا نظر آتا کیونکہ یہ اتنی شرمندگی کی بات ہے ،کہ ایک ذی شعور شخص اس مفروضے کو جواز بنا کرنوٹس جاری کردے۔