پوسٹ بجٹ پریس کانفرنس ،وزیراعلیٰ سندھ اپویشن ارکان کے احتجاج پر جذباتی ہوگئے

جومیری شہید قیادت کے خلاف زبان درازی کرے گا اوراسے کسی عوامی ردعمل کا سامنا کرنا پڑے گا تومیں اسکا ذمہ دارنہیں،مراد علی شاہ

جمعہ مئی 19:40

پوسٹ بجٹ پریس کانفرنس ،وزیراعلیٰ سندھ اپویشن ارکان کے احتجاج پر جذباتی ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) بجٹ تقریرکی طرح پوسٹ بجٹ پریس کانفرنس میں بھی وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ اپوزیشن ارکان کے سندھ اسمبلی میں احتجاج ،،کراچی سرکلرریلوے اورگرین بس کے معاملے پرانتہائی جذباتی ہوگئے ، ایک صحافی کے سوال پرکہ آپ نے بجٹ تقریرمیں اپوزیشن کے احتجاج کے جواب میں آپ نے کہاکہ اس کے نتیجے میں جوکچھ ہوا اس کے ہم ذمہ دارنہیں ہونگے جس پروزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ انتہائی جذباتی ہوگئے اوربولے آج پھرکہتا ہوں کہ جومیری شہید قیادت کے خلاف زبان درازی کرے گا اوراسے کسی عوامی ردعمل کا سامنا کرنا پڑے گا تومیں اسکا ذمہ دارنہیں ہوں۔

(جاری ہے)

صحافی کے اس سوال پرکہ آپ نے اپنے ایک بیان میں دعوی کیا تھا کہ اگردسمبر2017ء میں کراچی سرکلرریلوے کا سنگ بنیاد نہ رکھ سکا تو مستعفی ہوجاں گا ، وزیراعلی سندھ ایک بارپھرجذباتی ہوگئے ، وزیراعلی سندھ کا کہنا تھا کہ مجھے شہبازشریف کے ساتھ نہ ملایا جائے مجھے شہباز شریف کی طرح مائیک توڑنا اور الٹی سیدھے دعوے کرنا نہیں آتا، کراچی سرکلر ریلوے کی گرانڈ بریکنگ کرنے کے لیے بھی کاوشیں کیں لیکن ملکی حالات اچانک تبدیل ہوجانے اوروزیراعظم کی تبدیلی کے بعد کراچی سرکلرریلوے کا سنگ بنیاد رکھنا ممکن نہیں ہوسکا ۔