گولی اور گالی کی سیاست سے ملک کبھی ترقی نہیں کرتے اس روش نے پاکستان کو تباہی کے دھانے پر لا کھڑا کیا ہے‘غوث بخش بروزئی

ہمیں برداشت رواداری اور باہمی احترام کی فضا قائم کرنا ہو گی تاکہ معاشرے میں ایک دوسرے کو برداشت کرنے کی روایت فروغ پائے‘سابق وزیر اعلیٰ بلوچستان کا سیمینار سے خطاب

جمعہ مئی 21:52

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) سابق وزیر اعلیٰ بلوچستان نواب ڈاکٹر غوث بخش بروزئی نے کہا کہ گولی اور گالی کی سیاست سے ملک کبھی ترقی نہیں کرتے اس روش نے آج پاکستان کو تباہی کے دھانے پر لا کھڑا کیا ہے، ہمیں برداشت رواداری اور باہمی احترام کی فضا قائم کرنا ہو گی تاکہ معاشرے میں ایک دوسرے کو برداشت کرنے کی روایت فروغ پائے۔

(جاری ہے)

ان خیالات کااظہارانہوںنے پاکستان ملت فورم کے زیر اہتمام ’’معاشرے میں عدم برداشت اور اس کے اسباب‘‘ کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

اُنہوں نے کہا کہ بلوچ اعوام کے اندر آج بھی احساس محرومی پایا جاتا ہے ۔ کسی بھی حکومت نے اس احساس کو ختم کرنے کی سنجیدہ کوشش نہیں کی ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم سب کو مل کر اس مسئلے کی گہرائی تک پہنچنا چاہیے تاکہ حقیقی بنیادوں پر اس کو حل کیا جا سکے ۔ بلوچ عوام محب وطن ہیں بات صرف توجہ اور احساس کی ہے ۔ اس موقع پر انہوں نے احسن اقبال پر ہونے والے حملے کی بھی مذمت کی اور اسے اسلام کی حقیقی تعلیمات سے دوری کا شاخسانہ قرار دیا ۔