وزیر داخلہ نے زخمی حالت میں جب ناروال سے ٹیک آف کیا تو انہوں نے کیا خواہش ظاہر کی ،تفصیلات سامنے آ گئیں

وزیر داخلہ کو بتایا گیا کہ لاہور کے چوٹی کے نجی اور سرکاری ہسپتالوں میں انتظامات مکمل ہیں تو اسوقت احسن اقبال نے سروسز ہسپتال کو علاج کے لیے چنا اور وہاں جانے کی خواہش ظاہر کی

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس جمعہ مئی 20:30

وزیر داخلہ نے زخمی حالت میں جب ناروال سے ٹیک آف کیا تو انہوں نے کیا خواہش ..
نارووال(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار- 11مئی 2018ء ) وزیر داخلہ احسن اقبال نے ناروال سے ٹیک آف کرتے ہوئے سروسز ہسپتال جانے کی خواہش ظاہر کی۔وزیر داخلہ کو بتایا گیا کہ لاہور کے چوٹی کے نجی اور سرکاری ہسپتالوں میں انتظامات مکمل ہیں تو اسوقت احسن اقبال نے سروسز ہسپتال کو علاج کے لیے چنا۔تفصیلات کے مطابق ناروال میں جلسے کے دوران مسلم لیگ ن کے رہنما اور وزیر داخلہ کو قاتلانہ حملے کا نشانہ بنایا گیا تو احسن اقبال اس حملے میں شدید زخمی ہو گئے۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق ایک گولی انکی بازو میں لگی تھی۔جس کے بعد انکو ابتدائی طبی امداد کے لیے ناروال کے مقامی ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں انہیں ابتدائی طبی امداد دی گئی تا ہم زخموں کی نوعیت شدید ہونے کی وجہ سے انہیں لاہور منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔

(جاری ہے)

وزیر داخلہ احسن اقبال کو جب بتایا گیا کہ لاہور کے چوٹی کے سرکاری اور نجی ہسپتالوں میں انکے علاج معالجے کے حوالے سے انتظامات مکمل کر لئیے گئے ہیں تو انہوں نے اسوقت سروسز ہسپتال جانے کی خواہش کا اظہار کیا ۔

یاد رہے کہ کچھ روز قبل وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال شکرگڑھ کی تحصیل کنجرورمیں عوامی جلسے سے خطاب کے بعدواپس جارہے تھے کہ ان پر فائرنگ کی گئی۔ملزم عابد حسین نے نے احسن اقبال پردو فائر کیے جس میں ایک گولی احسن اقبال کے دائیں بازور پرلگی ہے۔۔۔پولیس نے فائرنگ کے واقعے کے بعد علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے،اور جائے وقوعہ کامعائنہ کیاکہ فائرنگ کس طرف سے کی گئی ہے۔

ملزمان کہاں سے آئے اور کتنے افراد تھے ۔ تاہم اسی اثناں میں جلسے کے شرکاء نے ملزم کوپکڑ کرپولیس کے حوالے کردیا۔شرکاء نے ملزم کوماراپیٹا بھی تھا۔۔پولیس کے مطابق ملزم کی عمر 21سال اور اسکا نام عابد حسین ہے جسکا تعلق قریبی گاوں سے ہے۔حملے کے فوری بعد یہ معلوم ہوا کہ احسن اقبال کے بازو پرگولی لگی ہے۔جس سے احسن اقبال شدید زخمی ہوگئے ہیں۔ تاہم احسن اقبال کوہسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں ڈاکٹرز نے انکے ابتدائی معائنے کے بعد انکی حالت کو خطرے سے باہر قرار دے دیا تھا۔