جموں کشمیر موومنٹ کراچی کے تحت کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف کراچی پریس کلب کے باہر بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا گیا

کشمیری تنہا نہیں، پوری قوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے۔ حکومت پاکستان مظلوم کشمیریوں کی کھل کر مدد و حمایت کرے، سیاسی ومذہبی رہنما پارلیمنٹ ہائوس سے کشمیریوں کے لیے مضبوط آواز بلند ہونی چاہیے۔ کشمیر پاکستان کی بقا کا مسئلہ ہے، احتجاجی مظاہرے سے خطاب

جمعہ مئی 23:05

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 مئی2018ء) جموں کشمیر موومنٹ کراچی کے تحت کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف کراچی پریس کلب کے باہر بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ جس سے خطاب کرتے ہوئے سیاسی و مذہبی رہنماؤں نے کہا ہے کہ کشمیری تنہا نہیں، پوری قوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے۔ حکومت پاکستان مظلوم کشمیریوں کی کھل کر مدد و حمایت کرے۔۔پارلیمنٹ ہائوس سے کشمیریوں کے لیے مضبوط آواز بلند ہونی چاہیے۔

کشمیر پاکستان کی بقا کا مسئلہ ہے۔حکومت اور سیاسی و مذہبی جماعتیں اپنی ترجیحات میں کشمیر کو سرفہرست رکھیں۔ شہدائے کشمیر کو نظر انداز کرنے والے خود نظر انداز ہوجائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار ملی مسلم لیگ پاکستان کے نائب صدر مزمل اقبال ہاشمی،،جمعیت علمائے پاکستان کے رہنما عقیل انجم، عالم دین مفتی عبداللطیف، جموں کشمیر موومنٹ کراچی کے رہنما عثمان عسکری، حافظ محمد امجد و د دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پر کشمیری شہداء کی غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی گئی۔ احتجاجی مظاہرے میں شہریوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ شرکاء نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر کشمیریوں کے حق میں اور بھارتی مظالم کے خلاف جملے درج تھے۔ مظاہرین نے بھارتی ترنگا بھی نذر آتش کیا۔مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے ملی مسلم لیگ پاکستان کے نائب صدر مزمل اقبال ہاشمی نے کہا کہ کشمیری نوجوان اسلام و پاکستان کی محبت میں قربانیاں دے رہے ہیں۔

کشمیریوں سے ہمارا رشتہ لا الہ الا اللہ کی نسبت سے استوار ہے اور یہ رشتہ قائم رہے گا۔ ہم کشمیریوں کی تحریک کو صرف کشمیر ہی نہیں پاکستان کی تحریک بھی سمجھتے ہیں۔۔پارلیمنٹ ہائوس سے کشمیریوں کے لیے مضبوط آواز بلند ہونے چاہیے۔کشمیری مائوں بہنوں اور مظلوموں کو تنہا نہیں چھوڑ سکتے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت ظلم کی تمام حدیں پار کرنے کے باوجود کشمیریوں کو جھکا نہیں سکا۔

کشمیری آزادی حاصل کرکے رہیں گے۔ اگر کشمیری میدانوں میں نکل کر قربانیاں دے رہے ہیں تو پاکستان میں بھی عوام ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ حکومت اور سیاسی و مذہبی جماعتیں بھی اپنی ترجیحات میں کشمیر کو سرفہرست رکھیں۔ جمعیت علمائے پاکستان کے رہنما عقیل انجم نے کہا کہ بھارت کی بوکھلاہٹ سے ہمیں یقین ہو گیا کہ کشمیر میں آزادی کا سورج بہت جلد طلوع ہونے والا ہے۔

اگرحکمران کشمیریوں کو فرامو ش کریں گے تو عوام بھی انہیں فراموش کردیں گے۔۔بھارتی جارحیت کے باوجود کشمیری جھکے نہیں۔ ہمیں متحد ہو کر ان کا ساتھ دینا چاہیے۔ عالم دین مفتی عبداللطیف نے کہا کہ ہم کشمیری مجاہدین کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔ وہ مسلسل قربانیاں دے رہے ہیں، شہید کی موت قوم کی امانت ہے۔ کشمیر صرف ایک خطہ نہیں بلکہ یہ اسلامیان کا خطہ ہے۔

ہم ہر موقع پر کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔۔جموں کشمیر موومنٹ کراچی کے رہنما عثمان عسکری اور حافظ محمد امجدنے کہا کہ کشمیری تحریک آزادی جاری رکھے ہوئے ہیں اور پاکستانی قوم مظلوم کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ کشمیری شہداء نے کشمیر کی تحریک کو نیا رخ دیاہے۔ افسوسناک امر یہ ہے کہ حکمرانوں نے کشمیریوں کے حق میںمضبوط آواز بلند نہیں کی۔ پاکستان کی طرف سے کشمیریوں کو مثبت پیغام جانا چاہیے تاکہ تحریک آزادی کو ہر سطح پر تقویت مل سکے۔