فاسٹ فو ڈزجسم کے اندرسوزش و جلن(انفیکشن)بڑھاتے ہیں ، ماہرین صحت

ہفتہ مئی 13:01

قصور۔12 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) جرمن ماہرین صحت نے خبردارکیاہے کہ فاسٹ فو ڈزجسم کے اندرسوزش و جلن(انفیکشن)بڑھاتے ہیں اوربیماریوں سے لڑنے والے قدرتی دفاعی نظام(امنیاتی)کو شدید متاثرکرتے ہیں۔

(جاری ہے)

یونیورسٹی آف بون کے ماہرین کیہ جدیدتحقیق سے معلوم ہواہے کہ جسم کا امنیاتی نظام فاسٹ فوڈ مثلاً برگر‘پیزااور فرنچ فرائروغیرہ کیساتھ وہی برتائو کرتاہے جس طرح وہ کسی بیکٹریایاپھر جراثیم کا سامناکرتاہے جوبدن میں جگہ جگہ اندرونی جلن کا سبب بنتاہے اسلئے بہترہے کہ فاسٹ فوڈزسے جس قدر ہودوررہاجائے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل کی گئی تحقیقات فاسٹ فوڈز کے مضراثرات کو واضح کرچکے ہیں جس میں بتایاگیا ہے کہ فاسٹ فوڈزموٹاپے‘ذیابیطس اور امراضِ قلب کی وجہ بنتے ہیں اور اسی بناء پر اسے غیر موزوں غذا قرار دیاگیاہے۔ماہرین نے تحقیق کیلئے ایک ماہ تک چوہوں کو مغربی ممالک کے فاسٹ فوڈزکھلائے مطالعے پر کام کرنے والی سائنسدان اینیٹ کرسٹ نے کہا کہ چوہوں کو دی گئی غیر صحتمندانہ غذا سے خون میں بعض اقسام کے امنیاتی خلیاتبڑھ گئے۔

متعلقہ عنوان :