ملائیشیا کے سابق وزیراعظم نجیب رزاق پر ملک چھوڑنے پر پابندی عائد

سابق وزیراعظم پر 2015 میں 700 ملین ڈالر کی رقم اسٹیٹ انوسٹمنٹ فنڈ سے منتقل کرنے کا الزام ہے

ہفتہ مئی 15:06

کوالالمپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) ملائیشیا کے سابق وزیراعظم نجیب رزاق اور اٴْن کی اہلیہ کے ملک چھوڑنے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔نجیب رزاق اور اٴْن کی اہلیہ ہفتہ کو بیرون ملک جانے کا ارادہ رکھتے تھے۔رواں ہفتے انتخابات میں نجیب رزاق کے حکمران باریسن نیشنل اتحاد کو انتخاباب شکست ہو گئی تھی۔

(جاری ہے)

اس پابندی پر نجیب رزاق نے کہاہے کہ اٴْنھیں امیگریشن حکام نے بتایاہے کہ وہ اور اٴْن کے خاندان کو ملک سے باہر سفر کرنے کی اجازت نہیں ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے سے بات چیت کرتے ہوئے اٴْنھوں نے یہ تو نہیں بتایا کہ حکام نے انھیں باہر جانے سے کیوں روکا البتہ نجیب رزاق کا کہنا تھا کہ وہ اس پاسداری کریں گے۔نجیب رزاق پر 2015 میں 700 ملین ڈالر کی رقم اسٹیٹ انوسٹمنٹ فنڈ سے منتقل کرنے کا الزام تھا تاہم وہ ان الزامات کی تردید کرتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :