جماعت اسلامی کراچی کی جانب سے 12 مئی کے شہداء سے اظہار یکجہتی کے لیے سٹی کورٹ کے باہر کیمپ لگایا گیا

ہفتہ مئی 17:41

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) جماعت اسلامی کراچی کی جانب سے 12 مئی کے شہداء سے اظہار یکجہتی کے لیے سٹی کورٹ کے باہر کیمپ لگایا گیا ۔ کیمپ میں وکلاء اور عوام کی بڑی تعداد موجود تھی ۔ کیمپ میں علامتی جنازے بھی رکھے گئے ۔ سٹی کورٹ کے باہر ایم اے جناح روڈ پر جماعت اسلامی کراچی کی جانب سے 12 مئی کے شہداء سے اظہار یکجہتی کے لیے کیمپ لگایا گیا ۔

کیمپ میں جماعت اسلامی کے کارکنان ، وکلاء اور عوام نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ کیمپ میں جماعت اسلامی کراچی کی جانب سے علامتی جنازے بھی رکھے گئے ۔ کیمپ سے امیر جماعت اسلامی کراچی سمیت دیگر مقامی قائدین نے خطاب کیا ۔ کیمپ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن کا کہنا تھا کہ 12 مئی کو کراچی میں ظلم و بربریت کا بازار گرم کیا گیا ۔

(جاری ہے)

اس وقت کے چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے معاملے پر از خود نوٹس بھی لیا ۔ سانحہ 12 مئی کے حوالے سے کمیشن بھی مقرر کیا گیا لیکن 11 سال کا عرصہ گزرنے کے باوجود انصاف نہ مل سکا ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم میں کراچی کو کچھ نہیں دیا ۔ چند سال قبل تک تحریک انصاف پیپلز پارٹی اور دیگر جماعتوں میں اتنی ہمت نہیں تھی کہ وہ ایم کیو ایم کے مقابلے میں اپنا امیدوار کھڑا کر سکے ۔ کراچی کی تعمیر و ترقی کے لیے متحدہ مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے میدان میں آ رہے ہیں ۔ کراچی کے عوام ہمارا ساتھ دیں گے اور متحدہ مجلس عمل کامیاب ہو گی ۔