’’ماں پیاری ماں‘‘کا رسپانس مدرزڈے سے پہلے ہی مل گیاہے۔انیتا بشیر

ماں کا نعم البدل پوری دنیامیں نہیں ہے آج جو کچھ بھی ہوں اپنی ماں کی وجہ سے ہوں۔انٹرویو

ہفتہ مئی 18:56

’’ماں پیاری ماں‘‘کا رسپانس مدرزڈے سے پہلے ہی مل گیاہے۔انیتا بشیر
مانگا منڈی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) معروف مصورہ و گلوکارہ انیتا بشیر نے آج مدرز ڈے کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ میرے مدرزڈے کے حوالے سے تیار کیئے گئے ویڈیو’’ماں پیاری ماں‘‘ کا رسپانس مجھے مدرز ڈے سے پہلے ہی مل گیاتھا کیونکہ میں نے اسے ایک ہفتہ قبل ہی سوشل میڈیا پر ریلیز کردیا تھااس کو ملنے والے لائکس اور مبارکباد کے کمنٹس اس بات کا ثبوت ہیں کہ اسے کتنا پسندکیاگیاہے۔

انیتا بشیرجو کہ بطور مصورہ پورے پاکستان میں اپنی پہچان بنا چکی ہوں ساتھ ساتھ گلوکاری بھی کررہی ہیں نے کہاکہ مجھے میوز ک کا اتنا شوق تھا کہ میں نے آرٹ میں بھی سات سروں کو ہی کینوس پر پینٹ کیا ہے جسے بیحد سراہاگیا انہوں نے کہاکہ مجھے زیادہ پہچان مصوری کی وجہ سے ملی آج مجھے خوشی ہورہی ہے کہ مجھے بطور گلوکارہ بھی بیحد پسندکیا جارہاہے انہوں نے کہاکہ میں آج جو کچھ بھی ہوں اپنی ماں بملا بشیر کی بدولت ہوں انہوں نے مجھے ہر جگہ سپورٹ کیاہے اور اگرمیں اچھی مصورہ بنی ہوں تو یہ بھی ان کا کمال اور دعائیں ہیں اور آج میرا ماں کے لیئے گایا گیا خصوصی گانا ہٹ ہوا ہے تو یہ بھی میری ماں کی وجہ سے ہے میں اپنی یہ شہرت اپنی یہ کامیابی اپنی ماں کے نام لگاتی ہوں اور ان کی شکرگزار ہوں کہ آج مجھے جتنی بھی کامیابیاں اور شہرت ملی ہے اس کا سارا کریڈٹ میری ماں کو جاتا ہے۔

(جاری ہے)

انیتا بشیر نے مذیدکہاکہ وہ آرٹ او رمیوزک کو ایک ساتھ لے کر چلیں گی اور کوشش کریں گی کہ جس طرح مصوری میںانہوں نے نام کمایا ہے اسی طرح گلوکاری میں بھی اپنا مقام بنائیںگی۔ مدرز ڈے کے حوالے سے دئیے گئے ایک پیغام میں انیتا بشیر نے کہاکہ ماں کا نعم البدل پوری دنیامیں نہیں ہے ماں کا رتبہ ہر چیز اور ہر رشتے پر بھاری ہے ہمیں اپنی مائوں کی قدر کرنی چاہیئے اور ان کی زندگی میں ہی ان کی اتنی خدمت کی جائے کہ ماں کے راضی ہونے کے ساتھ ساتھ ہمارا رب بھی راضی ہوجائے۔

متعلقہ عنوان :