امریکہ طالبان کو افغانستان پر دوبارہ قبضہ کرنے اور امریکہ پر حملہ کرنے کے قابل نہیں ہونے دے گا، بولٹن

دہشت گرد حملوں کو روکنے کے لیے تمام ضروری وسائل موجود ،طالبان سے مذاکرات کیلئے افغان حکومت پہل کر ے ، ایران اپنا میزائل پروگرام دوبارہ شروع کر دیتا ہے تو پھر خطے میں تباہی آئے گی، امریکی مشیر قومی سلامتی

ہفتہ مئی 22:49

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) امریکیقومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے کہا ہے کہ امریکہ طالبان کو افغانستان پر دوبارہ قبضہ کرنے اور امریکہ پر حملہ کرنے کے قابل نہیں ہونے دے گا، دہشت گرد حملوں کو روکنے کے لیے تمام ضروری وسائل موجود ہیں، طالبان سے مذاکرات کیلئے افغان حکومت کو پہل کرنی چاہیے، ایران اپنا میزائل پروگرام دوبارہ شروع کر دیتا ہے تو پھر خطے میں تباہی آئے گی۔

(جاری ہے)

امریکی میڈیا کو انٹرویو میں امریکہ کی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن کا کہنا تھا کہ افغانستان کی قوت میں اضافے کے حوالے سے ابھی بہت کچھ کیے جانے کی ضرورت ہے تاکہ دہشت گردوں وہاں دوبارہ قابض ہونے اور امریکہ پر دہشت گرد حملوں سے روکا کرنے سے روکا جا سکے، دہشت گردوں کو حملوں سے روکنے کے لیے ہمارے پاس تمام ضروری وسائل موجود ہیں،،ان کا کہنا تھا کہ طالبان سے مذاکرات کیلئے افغان حکومت کو پہل کرنی چاہیے۔ پھر ہم دیکھیں گے کہ آیا طالبان واقعی مذاکرات میں دلچسپی رکھتے ہیں جس سے امن کا راستہ ہموار ہو سکے،،ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ اگر ایران اپنا میزائل پروگرام دوبارہ شروع کر دیتا ہے تو پھر خطے میں تباہی آئے گی۔