ایک مرتبہ پھر دہشت گردی کا جن بوتل سے نکلنے کی کوشش کر رہا ہے، امیر بھنبھرو

دہشت گرد مافیا، لسانی گروہ سندھ میں آباد پرامن سندھی اور اردو بولنے والوں کے بیچ نفرتوں کا بیج بونے کی کوشش کی جا رہی ہے

ہفتہ مئی 22:40

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) ایک مرتبہ پھر دہشت گردی کا جن بوتل سے نکلنے کی کوشش کر رہا ہے، دہشت گرد مافیا، لسانی گروہ، مہاجر ازم اور مختلف جذباتی نعروں پر سیاست کرکے سندھ میں آباد پرامن سندھی اور اردو بولنے والوں کے بیچ نفرتوں کا بیج بونے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ لسانی مافیا کو ہر صورت میں اپنی سوچ بدلنی ہوگی۔ سندھ کا پرامن عوام سالوں سے جاری لاشوں کی سیاست سے تنگ آ چکا ہے، کسی بھی سیاسی اور مذہبی پارٹی کی سیاست کے نام پر تشدد اور عسکری ونگوں کو اجازت نہیں ہونی چاہیئے۔

امیر بھنبھرو نے 12 مئی کو کراچی میں ہونے والے قتل عام کے خلاف اور شہید ہونے والوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے سلسلے میںسندھ نیشنل پارٹی کی طرف سے امن ریلی پارٹی کی مرکزی آفس سندھ مرکز سے کراچی پریس کلگ تک نکالی گئی، اس موقعے پر سندھ نیشنل پارٹی کے چیئرمین امیر بھنبھرو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 12 مئی پاکستان کی تاریخ کا وہ سیاہ دن ہے، جس دن پر مشرف سرکار کے آشروارد سے را کے ایجنٹ ایم کیو ایم کے دہشتگردوں نے معصوم انسانوں کا جانوروں جیسے شکار کرکے پوری انسانیت کو شرم سار کردیا۔

(جاری ہے)

لندن میں بیٹھے ہوئے دہشتگرد را اور موساد کے اشاروں پر پاکستان کے امن کو تباہ کرکے پرامن ماحول کو خانہ جنگی میں تبدیل کرنے کی کوشش کی ہے مگر ہم پاکستان کے سیکیورٹی اداروں کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے بروقت کاروائی کرکے دہشتگردوں کے جن کو بوتل میں بند کردیا۔ مگر امن کے دشمن را کے ایجنٹ ایک مرتبہ پھر بوتل سے نکل کر نام بدل کر لسانیت کے نام پر دہشتگردی کو طول دینے کے لئے نئے صوبے کا شوشہ چھوڑ کر بھائی کو بھائی سے لڑانا چاہتے ہیں۔

امیر بھنبھرو نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ تاریخ نے سندھ نیشنل پارٹی پر بڑی ذمیواری ڈال دی ہے کہ سندھ نیشنل پارٹی الطاف کے گروپ کے دہشتگردوں کو ہر صورت میں روکے گی، اب 12مئی جیسے واقعات ہونے نہیں دیں گے، ہم آج 12مئی کے شہداء کو سرخ سلام پیش کرتے ہیں جن کی شہادتوں کی سے روشنیوں کے شہر کراچی کے کھوئی ہی روشنی اور امن بحال ہوا ہے۔ امیر بھنبھرو نے مزید کہا کہ ہم نے امن پر نہ سمجھوتا کیا ہے نہ کبھی کرینگے، دہشتگردوں اور امن دشمنوں کے خلاف جدوجہد جاری رہے گی، آج کراچی میں ہونے والا امن ہمیں کسی نے پلیٹ میں رکھ کر نہیں دیا، اس میں ہزاروں اردو، سندھی، بلوچ، پٹھان، پولیس اور رینجرز کے جوانوں کا لہو شامل ہے۔

سندھ نیشنل پارٹی نے ہمیشہ کراچی میں دہشتگردی کے خلاف بھرپور جدوجہد کی ہے، جس کے نتیجے میں ملک دشمن اور سندھ دشمن الطاف حسین کی بربریت کا خاتمہ ہوا اور آج کراچی میں ملک کا عوام آزادی کے ساتھ سانس لے رہے ہیں، اس امن کو عوام کے بھرپور تعاون سے ملک کے سکیورٹی اداروں اور رینجرز کی زندہ دلی، محنت اور قربانیاں شامل ہیں، اس موقع پر پارٹی کے وائیس چیئرمین رمضان بلید، جنرل سیکریٹری ڈاکٹر اصغر ڈاہری، سائیں بخش بنگلانی، ڈاکٹر دائود آتھو، امیر قمبرانی و دیگر نے بھی خطاب کیا۔