ڈائو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں ’’ورلڈ نرسنگ ڈے‘‘ کا انعقاد

ہفتہ مئی 22:50

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) اسکول آف نرسنگ اینڈ مڈ وائفری پروفیسر ڈاکٹر یامسمین امارسی نے کہا ہے کہ 50 سال سے میں نرسنگ کے شعبے سے وابستہ ہوں، ایک صحتمند معاشرے کے لئے صحتمند ماہر نرس کا ہونا بہت اہمیت کا حامل ہے، ایک نرس کو صحت سے وابستہ خدمات مہیا کرنے کا چیمپین ہونا چاہئے، نرس کو معاشرے میں موجود بیماریوں سے لڑنے اور مریض کو صحتیاب کرنے کے گر مکمل طور پر آنے چاہیئں۔

ہفتہ کو جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق یہ بات انہوں نے ڈائو یونیورسٹی کے اوجھا کیمپس میں ’’ورلڈ نرسنگ ڈے‘‘ پر منعقد ہونے والی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر پرو وائس چانسلر ڈائو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پروفیسر زرناز واحد، اسسٹنٹ پروفیسر سرفراز مسیح، انسٹیٹیوٹ آف نرسنگ کے ڈائریکٹر حاکم شاہ،،ڈاکٹر شاہ کمال ہاشم، ڈاکٹر رومیکا اور ڈاکٹر امجد علی نے بھی خطاب کیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پر سینئر فیکلٹی ممبرز اور طلبہ کی بڑی تعداد موجود تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے معاشرے میں نرس کو وہ اہمیت نہیں دی جاتی جو کہ دنیا بھر میں دی جاتی ہے۔ انہوں نے شعبے سے وابستہ افراد پر زور دیا کہ وہ اپنے پیشہ ورانہ مہارت سے نہ صرف معاشرے میں نمایاں مقام حاصل کر سکتے ہیں بلکہ لوگوں کی دعائیں بھی سمیٹ سکتے ہیں۔ انہوں نے اس شعبے سے وابستہ یوتھ کو مخاطب کرکے کہا کہ معاشرے میں اپنے شعبے کو منوانے اور معاشرے کو صحتمند رکھنے کے ذمہ داری آپکے کاندھوں پر ہے۔

اس موقع پر ڈائو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کی پرو وائس چانسلر پروفیسرز زرناز واحد نے کہا کہ پاکستان میں نرس کے شعبے کو وہ مقام نہیں مل سکا تھا، جو دنیا میں اس کی اہمیت ہے، مگر اب اس پر توجہ دے جارہی ہے، اسی لئے یہ دن پاکستان سمیت دنیا بھر میں منایا جاتا ہے، ڈائو یونیورسٹی نے نرسنگ کے شعبے میں مختلف کورسز کراکے اس کی اہمیت کو اجاگر کیاہے، جلد ہی نرسنگ کا شعبہ پاکستان میں ترقیوں کی بلندی کو چھوتا نظر آئیگا۔

انسٹیوٹیوٹ آف نرسنگ کے ڈائر یکٹر حاکم شاہ نے کہا کہ کسی بھی معاشرے کو صحتمند زندگی فراہم کرنے میں بنیادی کردار نرس کا ہوتا ہے، یہ شعبہ نرس سے انتہائی ذمہ داری کا تقاضہ کرتا ہے، نرس کا مثبت رویہ کسی بھی مریض کو صحتمند کرنے میں اپنی اہمیت رکھتا ہے، ہمارے معاشرے میں موجود چیلنجز کو مدِنظر رکھتے ہوئے نرسوں کو اس سے نمٹنا ہو گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ڈائو یونیورسٹی پاکستان کی سب سے بڑی آرگنائزیشن ہے جو اس شعبے میں آنے والے خواتین و حضرات کو ٹریننگ فراہم کر رہی ہے۔ آخر میں اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر سرفراز مسیح نے مہمانِ خصوصی سمیت تمام شرکاء کی آمد کا شکریہ ادا کیا۔

متعلقہ عنوان :