ہری پور،ضلع ناظم عادل اسلام اور یونین کونسل ناظمین کے درمیان ٹھن گئی

ایک دوسرے پر کرپشن کے الزامات کی بوچھاڑ

ہفتہ مئی 22:51

ہری پور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) ضلع ناظم عادل اسلام اور یونین کونسل ناظمین کے درمیان ٹھن گئی ایک دوسرے پر کرپشن کے الزامات کی بوچھاڑ کا سلسلہ شروع کچھ عرصہ قبل ممبران ضلع کونسل اور پارٹی کے اندر سبھی ضلع ناظم کو گرانے کیلئے تحریک عدم اعتماد کے شوشے چھوڑے جاتے رہے مگر تاحال کسی نے تحریک عدم اعتماد نہ لا سکی کیونکہ سب کے مفادات ایک ہیں ۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق ضلع ناظم کی طرف سے یونین کونسلوں تحصیل کونسلوں کی سطح پر مبینہ طور پر ترقیاتی کاموں میں کرپشن کی تحقیقات کا عندیہ دیا گیا اور اس سلسلے میں زرائع کے مطابق ADلوکل گورنمنٹ کو احکامات بھی جاری ہوئے جس پر یوسی ناظمین کو یہ بات بری لگی اور وہ سیخ پا ہو گئے اور ضلع ناظم کے خلاف محاز کھول دیا اور کہا جارہا ہے کہ خود کرپشن میں لت پت ہونے والا ہم پر کس ثبوت کی بناء پر کرپشن کے الزامات لگا رہا ہے اگر کسی یونین کونسل میں کرپشن ہوئی ہے تو اسکا نام لیکر تحقیقات کرائی جائے سب کی بے عزتی نہ کی جائے اب ماحول گرم ہے اور ناظمین نے اپنے دفاع کیلئے اجلاس بلا کر آئندہ کالائحہ عمل طے کرنا شروع کر دیا ہے پچھلے 3سالوں میں متعدد مرتبہ ضلع ناظم کی کرسی چھیننے کی کوشش کی گئی مگر سب ناکام رہے پارٹی کی اندرونی سطح پر بھی ضلع ناظم کو گرانے کیلئے متعدد مرتبہ تحریک عدم اعتماد لانے کی دھمکیاں دی گئیں اپوزیشن کی طرف سے بھی مگر ایسا کچھ نہ ہو سکا کیونکہ سب کے مفادات ایک ہیں الیکشن 2018ء قریب اور سیاسی ماحول گرم ہو رہا ہے ۔

متعلقہ عنوان :