تمبو،گزشتہ پانچ سال میں کرپٹ حکمرانوں نے ملکی معیشت کا بیڑا غرق کردیا

،رہنماجماعت اسلامی عوام اب باشعور ہوچکے ہیں، آنے والے الیکشن میں ایم ایم اے عوام کی طاقت سے پارلیمنٹ میں پہنچ کر ملک کو خوشحال بنائیں گے، ڈیرہ مرا دجمالی میں ورکر کنونشن سے خطاب

ہفتہ مئی 22:51

تمبو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) گزشتہ پانچ سال میں کرپٹ حکمرانوں نے ملکی معیشت کا بیڑا غرق کردیا الیکشن سے قبل بڑے بڑے دعوے کرکے عوام کو سہانے خواب دکھا کر پارلیمنٹ میں پہنچنے کے بعد اپنے کئے گئے وعدے نہ نبھا سکے،عوام اب باشعور ہوچکے ہیں آنے والے الیکشن میں ایم ایم اے عوام کی طاقت سے پارلیمنٹ میں پہنچ کر ملک کو خوشحال بنائیں گے ان خیالا ت کا اظہار جماعت اسلامی بلوچستان کے امیر مولانا عبدالحق ہاشمی،جنرل سیکریٹری مولانا ہدایت الرحمان بلوچ،صوبائی نائب امیر بشیر احمد ماندائی،پروفیسر محمد ابراہیم ابڑو مولانا عبدالواحد زہری ڈاکٹر حیدر منجھویونس منجھو خاوند بخش مینگل صالح مسلم نے ڈیرہ مرا دجمالی میں ورکر کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا مقریرین نے کہا کہ پاکستان ایک اسلامی اور نظریاتی ملک ہے اور اس کی خوشحالی کا ضامن صرف اسلامی حکومت ہی مضمر ہے سیکولر قوتیں پاکستان کے اسلامی تشخص کو مٹانے اورعوام کے ذہنوں میں نظریات کو ختم کرنے کی مذموم کوشش کر رہے ہیں لیکن یہاں کے عوام کبھی بھی ان سیکولر ایجنڈوں کو کامیاب ہونے نہیں ہونے دیں گے ملک کی معیشت کو یہاں کے کرپٹ اور نااہل حکمرانوں نے تباہ کردیا اپنے تجوری بھرنے میں مصروف ہوکے ملکی خزانے کو تباہی کے دہانے پہ پہنچا دیا محکمہ جات کو بھی کرپٹ آفیسران کے حوالے کرکے وزراء خود کمیشن لینے میں مشغول ہوکے رہ گئے اس وقت ملک کو مضبوط اور خوشحال اور فلاحی ریاست بنانے کے لیے دیانت دار حکمرانوں کی سخت ضرورت ہے اور یہ دیانت دار قیادت صر ف اور صرف ایم ایم اے کے پاس ہے جو ایک عزم کے ساتھ سیاست کو عبادت سمجھ کر عوام کے فلاح و بہبود کے لیے ہمہ تن مصروف عمل رہتے ہیں بلوچستان کے قوم پرست حکمرانوں نے دعوے تو بڑے کیے لیکن عوام کے بجائے اپنے ہی خاندانوں کو خوشحال بنائے جس کی وجہ سے بلوچستان کے عوام کی احساس محرومی ختم ہونے کے بجائے مزید بڑھ گئے اربوں روپے پانی کے ٹینکیوں میں نکل آئے لیکن عوام آج بھی دو وقت کی روٹی کے لیے ترس رہے ہیں انہوں نے کہا عوام باشعور ہوچکے ہیں آنے والے عام انتخابات میں نیک اور صالح لوگوں کو ووٹ دے کر پارلیمنٹ میں پہنچائے گی اور اس بار متحدہ مجلس عمل ایک نئے عزم اور تابناک منشور کے ساتھ میدان میں اتر رہی ہے اور بڑی تعداد میں پارلیمنٹ میں پہنچ کر ملک کو ایک اسلامی اور فلاحی ریاست بنائے گی۔