کراچی،چیف جسٹس میاں ثاقب نثارکا سینٹرل جیل کا تفصیلی دورہ

جیل میں سزا یافتہ اور زیر سماعت مقدمات کے قیدیوں نے شکایات کی ہماری سزائیں پوری ہوچکیں مگر پھر بھی قید کر رکھا ہے،قیدیوں کی شکایت ایسے قیدی جن کی سزا مکمل ہوچکی ان کی رپورٹ 10 دنوں میں دیں،چیف جسٹس کا حکم

ہفتہ مئی 22:52

کراچی،چیف جسٹس میاں ثاقب نثارکا  سینٹرل جیل کا تفصیلی دورہ
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 مئی2018ء) چیف جسٹس میاں ثاقب نثارنے سینٹرل جیل کراچی کا تفصیلی دورہ کیا۔ چیف جسٹس نے کچن , اسپتال, قیدیوں کی مختلف بیرکوں کا دورہ کیا۔۔جیل میں سزا یافتہ اور زیر سماعت مقدمات کے قیدیوں نے شکایات کی۔ قیدیوں نے شکایات کرتے ہوئے کہا کہ ہماری سزائیں پوری ہوچکیں مگر پھر بھی قید کر رکھا ہے۔۔چیف جسٹس نے قیدیوں سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ اگر آپ کی سزا مکمل ہو چکی ہے تو رہائی مل جائے گی۔

(جاری ہے)

چیف جسٹس میاں نثار نے کا جیل حکام کو حکم دیتے ہوئے کہا کہ ایسے قیدی جن کی سزا مکمل ہوچکی ان کی رپورٹ 10 دنوں میں دیں۔۔چیف جسٹس نے قیدیوں کو فراہم کیے جانے والے کھانے کا معائنہ کیا اور چیف جسٹس نے کھانا خودبھی کھایا۔جسٹس فیصل عرب نے بھی کھانا خود کھا کر چیک کیا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ سینٹرل جیل سندھ کے انتظامات دیگر صوبوں سے بہتر ہیں۔۔چیف جسٹس نے جیل کے اندر بنے ہوئے فائن آرٹس اور میوزک اسکول کا دور بھی کیا۔ اس موقع پر چیف جسٹس کے ساتھ ہوم سیکریٹری سندھ ، آئی جی جیلزسندھ اور ڈائریکٹر پریس انفارمیشن میڈم زینت جہاں بھی موجود تھیں۔