سماء ٹی وی کے میزبان علی عارف نے استعفیٰ دے دیا

والدہ کے کہنےپراستعفیٰ دیا، حلفاً کہتا ہوں کہ ملزمان سے آئی فون نہیں لیے،غصے میں آئی فون لینے کی بات ضرور کی تھی، بلاوجہ میری کردارکشی کی گئی ،ملزمان کووالدہ کے کہنے پرمعاف کیاہے۔ اردوپوائنٹ سے خصوصی گفتگو

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ اتوار مئی 16:00

سماء ٹی وی کے میزبان علی عارف نے استعفیٰ دے دیا
لاہور(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13مئی 2018ء) :نجی ٹی وی کے مارننگ شوپروگرام کے میزبان علی عارف نے سماء ٹی وی سے استعفیٰ دے دیا ہے،علی عارف نے والدہ کے کہنے پراستعفیٰ دیا ہے،علی عارف کا کہنا ہے کہ حلفاً کہتا ہوں کہ ملزمان سے آئی فون نہیں لیے،غصے میں بات ضرور کی تھی، تاہم بلاوجہ میری کردارکشی کی گئی ہے۔ انہوں نے آج اردوپوائنٹ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ میری گاڑی کوڈیفنس کراچی میں جنید اور احمد ولی کاکڑ نے روکا اور گالیاں دیں۔

میں نے ان کیخلاف سوشل میڈیا پرآواز اٹھائی۔ جس پروزیرداخلہ نے نوٹس لیا اور ملزمان گرفتار ہوگئے۔خالد کاکڑ جو کہ متعلقہ نوجوانوں کاکزن ہے اس نے میرے ساتھ معاملہ طے کرنے کی بات کی۔تاہم میں نے اپنی والدہ کے کہنے پرڈیفنس تھانہ میں ان کومعاف کردیا۔

(جاری ہے)

حلفاً کہتا ہوں کہ ملزمان سے آئی فون نہیں لیے،غصے میں بات ضرور کی تھی، تاہم بلاوجہ میری کردارکشی کی گئی ہے۔

جبکہ اس میں کرپشن کا کوئی ایسا معاملہ بھی نہیں ہے۔یہ میرا اور ان لڑکوں کے درمیان معاملہ تھا۔۔میرا نقصان ہوا،گالیاں دی گئیں میں ان سے نقصان کے ازالے کا مطالبہ کرسکتا تھا۔ لیکن میں ایسا نہیں کیا۔ میں نے ان کواپنی والدہ کے کہنے پرمعاف کردیا۔ادارے کا حصہ رہا لیکن ادارے نے ساتھ نہیں دیا۔اس لیے مستعفی ہوگیا ہوں۔ والدہ کا کہنا ہے کہ میزبان علی عارف کوسکیورٹی خدشات لاحق ہوگئے تھے ۔

والدہ نے بتایا کہ علی عارف کی جان کو خطرات لاحق تھے۔ اسی وجہ سے والدہ خودکراچی گئیں اور اپنے بیٹے سے استعفیٰ دلوایا۔ واضح رہے ڈیفنس کراچی میں کچھ روز قبل کاکڑ فیملی کے دو بگڑے نوجوانوں نے شہری سے بدتمیزی کی، جسکی ویڈیو نے سوشل میڈیا پرتہلکہ مچا دیا۔ بگڑا نوجوان رانگ سائیڈ سے گاڑی لایا اور روک کربدتمیزی کی۔ ویڈیو وائرل ہونے کے بعدوزیرداخلہ سہیل احمد سیال نے نوٹس لیا اورقانون شکنی والا نوجوان اور اس کا ساتھی گرفتار ہوگیا تھا۔

واقعے سے پتا چلا کہ یہ نوجوان بلوچستان کے آفیسر کا بیٹا تھا۔اسی دوران یہ بات بھی سامنے آئی کہ یہ واقعہ نجی ٹی وی پرمارننگ شو کرنے والے میزبان علی عارف کے ساتھ پیش آیا۔پھر ان کی آڈیو ریکارڈنگ بھی سامنے آئی جس میں علی عارف ملزمان سے ایک فون ٹوٹنے کے بدلے دوآئی فون کا مطالبہ کیا۔علی عارف نے میڈیا کیمروں کے سامنے علی عارف کومعاف بھی کیا ۔تاہم اب علی عارف نے تمام واقعے کے حقائق سامنے رکھ دیے ہیں۔