رمضان المبارک کی آمد سے قبل ہی اشیاء سرف کی قیمتوں کو پر لگ گئے

ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں نے عوام کے جیبوں پر ہاتھ صاف کرنے کی تیاریاں مکمل کر لیں

اتوار مئی 16:50

خالق آباد منگچر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 مئی2018ء) رمضان المبارک کی آمد اشیاء سرف کی قیمتوں کو پر لگ گئے ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں نے عوام کے جیبوں پر ہاتھ صاف کرنے کی تیاریاں مکمل کر لی ہیں سروئے کے مطابق پچھلے سالوں کی طرح اس سال بھی رمضان المبارک کے آغاز سے قبل مہنگائی کا جن بے قابو ہو گیا ہے مقامی انتظامیہ کی جانب سے گران فروشوں کو تنبیہ کی جاتی ہیں اور بعض کو جرمانے بھی کئے جاتے ہیں لیکن گران فروشی کا سلسلہ ماہ مقدس میں ھسب رویت جاری رہتا ہے منافع خور اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں پیشگی اضافہ کرکے ماہ مقدس سے پہلے ہی خودساختہ اضافہ کر لیتے ہیں شہریوں کے مطابق گران فروش تاجر اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں خودساختہ اضافہ کر کے شہریوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹتے ہیں ماہ رمضان سے پہلے ہی گوشت چھوٹا بڑا ،بیسن،کھجور،دودھ،دہی،مشروبات،پھل سبزیاں،بیکری دیگر ضروریات زندگی کی اشیاء کی قیمتوں میں خودساختہ اضافہ کر کے روزہ داروں پر مہنگائی کا ایٹم بم گرادیتے ہیں رمضان المبارک میں کم ناپ تول اور ملاوٹ بھی کی جاتی ہے حالانکہ گران فروشی اور ذخیرہ اندوزی ملکی قوانین اور دین اسلام میں سنگین جرم ہے دیگر غیر مہذب ممالک میں بھی امضان المبارک میں مسلمانوں کے ساتھ خصوصی ریایت کی جاتی ہے لیکن ہمارئے ہان مسلمان ملک اور خود مسلمان ہو کر اس ماہ مقدس کو ہم نے تجارت بنایا ہے یہاں اگر کوئی قانون کے ہتھے چڑھ بھی جائے تو اس کی بحفاظت جان خلاصی کی جاتی ہے رمضان المبارک سے قبل عوام کو لوٹنے کی تیاریاں زوروشور سے جاری ہیں عوامی حلقوں کی جانب سے انتظامیہ سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ منافع خوری و گران فروشی کی روک تھا م کے لئے بروقت ماہ مقدس سے قبل قیمتوں میں خودساختہ اضافہ،کم ناپ تول اور ملاوٹ کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے ۔

متعلقہ عنوان :