یڈ ان چائنا دو ہزار پچیس" پر امریکی تشویش غیر ضروری ہے،چین

فریقین کو تنازعات سے معقول طریقے سے نمٹنا چاہیے،چین نے اپنی صنعتوں کی ترقی کے اہداف مرتب کرکے مذکورہ منصوبہ ترتیب دیا ہے، ان اہداف کی تکمیل کے لئے چین دیگر ملکوں کے ساتھ تعاون اور شراکت ترک نہیں کریگا امریکہ میں چینی سفیر زوئی تھین کھائی کا سیمینار سے خطاب

اتوار مئی 18:20

واشنگٹن (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 مئی2018ء) چین نے کہا ہے کہ میڈ ان چائنا دو ہزار پچیس پر امریکی تشویش غیر ضروری ہے، فریقین کو تنازعات سے معقول طریقے سے نمٹنا چاہیے،،چین نے اپنی صنعتوں کی ترقی کے اہداف مرتب کرکے مذکورہ منصوبہ ترتیب دیا ہے، ان اہداف کی تکمیل کے لئے چین دیگر ملکوں کے ساتھ تعاون اور شراکت ترک نہیں کریگا ۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق امریکہ میں تعینات چین کے سفیر زوئی تھین کھائی نے سیمینار میں کہا کہ بعض امریکی شہریوں کی چین کے "میڈ ان چائنا دو ہزار پچیس" نامی منصوبے کے حوالے سے تشویش غیر ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین اور دیگر تمام ممالک سائنس و ٹیکنالوجی کے شعبوں میں ترقی کے خواہش مند ہیں جو کہ ایک معمول کی بات ہے۔۔چین نے اپنی صنعتوں کی ترقی کے اہداف مرتب کرکے مذکورہ منصوبہ ترتیب دیا ہے ۔

(جاری ہے)

ان اہداف کی تکمیل کے لئے چین دیگر ملکوں کے ساتھ تعاون اور شراکت ترک نہیں کریگا ۔چینی سفیر نے مزید کہا کہ اس وقت دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی کشمکش جاری ہے۔

فریقین کو تنازعات سے معقول طریقے سے نمٹنا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ بعض امریکیوں کو تشویش ہے کہ چین کی اصلاحات پر عملدرآمد کے عمل میں تاخیر ہوگی۔حقیقت یہ ہے کہ چین کی تمام کامیابیاں اصلاحات اور کھلی پالیسی کے نفاذ سے ہی حاصل ہوئی ہیں۔ہم سمجھتے ہیں کہ اصلاحات اور کھلی پالیسی کو جاری رکھنا ہی چین کی ترقی کی ضمانت ہے۔

متعلقہ عنوان :