چیف جسٹس ثاقب نثار نے بلوچستان کے میڈیکل کالجز میں میرٹ پر آنے والے مستحق طلبہ کے داخلہ کا حکم دے دیا

اتوار مئی 18:50

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 مئی2018ء) چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے بلوچستان کے میڈیکل کالجز میں میرٹ پر آنے والے مستحق طلبہ کے داخلہ کا حکم دے دیا عدالت کا کہنا ہے ایچ ای سی ان طلبا کے اخراجات بر داشت کرے اور ضرورت پڑنے پر نئی سیٹیں بھی تخلیق کی جائیں۔

(جاری ہے)

اتوار کے روز بلوچستان کے میڈیکل کالجز میں مستحق طلبا کے داخلے سے متعلق از خود نوٹس کیس کی سماعت چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سر برا ہی میں دو رکنی بینچ نے کی، دورا ن سماعت رجسڑار پی ایم ڈی نے عدالت کو بتا یا کہ سپریم کورٹ حکم کے مطابق داخلہ سے متعلق رپورٹ جمع کروا دی ہے تمام میڈیکل کالجز کو ایچ ای سی لسٹ کے مطابق خط لکھ دئیے اور معلومات ویب سائٹ پر بھی ڈال دی ہے تاہم طلبا سے برا ہ راست رابطہ نہ ہونے کے باعث مشکلات ہیں ایڈوائزر ایچ ای سی نے بتا یا کہ میڈیکل کالجز کا موقف ہے کہ ان طلبا کیلئے اضافی سیٹیں بنانا ہوں گے سیشن چل رہے ہیں کالجز کا کہنا ہے کہ وہ کوٹہ کی نشستیں پہلے دے چکے ہیں جس پر چیف جسٹس نے کہا عدالتی حکم میں اضافی سیٹوں کا کہا گیا تھا لیکن پھر بھی داخلہ نہیں ہو سکا میں باہر جا رہا ہوں کوئی ابہام ہے تو بتا دیں فنڈز اور سیٹوں سے متعلق نیا حکم جا ری کر دیتے ہیں عدالت نے بلوچستان کے طلبا کے اخراجات ایچ ای سی کو ادا کرنے کا حکم دید تے ہو ے تمام طلبائ کو میڈیکل کالجز میں سیٹ دینے کا حکم بھی دیا194 طلبامیرٹ پر نام آنے کے باوجود بھاری فیسز کے باعث داخلہ نہیں لے سکے تھی۔