ایران ، دولت اسلامیہ کی8مبینہ ارکان کو سزائے موت سنادی گئی

اتوار مئی 18:50

تہران(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 مئی2018ء) ایران نے گزشتہ سال جون میںتہران میں یکے بعددیگرے دوخونی حملوں سے تعلق میں دولت اسلامیہ کی8مبینہ ارکان کو سزائے موت سنادی ہے،یہ بات عدلیہ کی نیوز ایجنسی نے اتوار کے روز کہی ہے ۔ ایرانی سرزمین پر یہ پہلے حملے تھے جن کی ذمہ داری آئی ایس نے قبول کی تھی ،جس میںپارلیمنٹ اورانقلابی رہنماء آیت اللہ روح اللہ خمینی کے مزار کو نشانہ بنایا گیااور17افراد ہلاک اوردرجنوں زخمی ہوئے تھے ۔

(جاری ہے)

عدالت کے صدرکاحوالہ دیتے ہوئے میزان آن لائن نے کہا کہ آٹھ مدعاعلیہان بغاوت کے مرتکب ٹھہرائے گئے ہیں ۔ مقدمہ کی کارروائی 28اپریل کو شروع ہوئی تھی اور مجرمان فیصلے کیخلاف اپیل کرسکتے ہیں ۔ گزشتہ سال سات جون کے حملے کے دوران سات منصوبہ ساز ہلا ک ہوگئے تھے ۔ سزائے موت پانیوالے والو ں میں کچھ حملہ آوروں کی مدد کے مرتکب قرار پائے ہیں ۔ عدلیہ کی پریس ایجنسی اپریل کے آخر میں ابتدائی سماعت کے بعد بتایا تھا کہ حملوں کے بعد گرفتاریوں کے بعد26افراد کیخلاف مقدمہ چل رہا ہے۔ میزان آن لائن کا کہنا ہے کہ بعض ملزمان نے آئی ایس میں بیرون ملک شمولیت اختیا ر کی اورایران واپس آکرحملے کئے ۔