ھائی رائز بلڈنگز کا تصور اپنانا وقت کی ضرورت ہے ، ثاقب محمود

مغربی ممالک میں روف ٹاپ باغیچوں کا رجحان تیزی سے فروغ پا رہاہے ،کنزرویٹر فاریسٹ

پیر مئی 15:20

راولپنڈی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 مئی2018ء) کنزرویٹر فاریسٹ راولپنڈی سائوتھ سرکل ثاقب محمود نے کہا ہے کہ موسمیاتی تبدیلیوں کا مقابلہ کرنے کے لیے درختوں کی اہمیت و افادیت مسلمہ ہے ، ایک درخت کے بدلے 10پودے لگا کر ہی توازن برقرار رکھا جا سکتا ہے ،آبادیوں کے پھیلائو کی بجائے ھائی رائز بلڈنگز کا تصور اپنانا وقت کی ضرورت ہے ۔کنزرویٹر فاریسٹ راولپنڈی سائوتھ سرکل ثاقب محمود نے اے پی پی سے بات چیت کرتے ہوئے بتایاکہ بہاریہ شجر کاری مہم2018 ( فروری تا جون )کے دوران راولپنڈی سائوتھ سرکل بشمول ضلع جہلم ،چکوال او رتحصیل راولپنڈی ،ٹیکسلا و گوجر خان میں مجموعی طور پر 11,20,000پودے لگانے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا جبکہ 30اپریل تک 965,000 پودے لگا کر مقررہ ہدف کا.16 86فی صد تقریباً تین ماہ میں حاصل کر لیا ہے ۔

(جاری ہے)

ثاقب محمود نے تیزی سے بڑھتی ماحولیاتی آلودگی کے مسائل پر قابوپانے کے لیے شہریوں پر زور دیا کہ وہ شجر کاری مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں اور زیادہ سے زیادہ پودے لگائیں ۔کنزرویٹر فاریسٹ راولپنڈی سائوتھ سرکل ثاقب محمود نے آفیشل نیوز ایجنسی سے بات چیت کرتے کہاکہ محکمہ جنگلات درختوں کی افادیت اجاگر کرنے کے سلسلہ میں کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ درخت لگا کر قدرتی حسن کے ساتھ ساتھ ماحولیاتی آسودگی کو بھی برقرار رکھا جا سکتا ہے ۔

انہوں نے کہاکہ ملک میں جنگلات میں اضافے کا ٹاسک صرف حکومت پورا نہیں کر سکتی ا س مقصد کے لیے زندگی کے ہر شعبہ سے وابستہ افراد کو اپنا کردار ادا کرنا ہو گا ۔ایک سوال کے جواب میں ثاقب محمود نے کہاکہ مغربی ممالک میں روف ٹاپ باغیچوں کا تصور بھی فروغ پا رہاہے اور کم جگہ پر رہائش کے ساتھ ماحول کو سرسبز رکھنے کے جدید تصورات مقبول ہو رہے ہیں۔