اٹھارہ ہزاری،ٹی ایچ کیو میں وارڈ بوائے کا مریضہ کو موبائل نمبر دینے کا معاملہ

ایمرجنسی وارڈ میں شدید ہنگامہ آرائی،ہسپتال انتظامیہ کی واقعہ چھپانے کی کوشش،اسسٹنٹ کمشنر کا فوری نوٹس،رپورٹ طلب کرلی گئی

پیر مئی 22:30

اٹھارہ ہزاری(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 مئی2018ء) ٹی ایچ کیو میں وارڈ بوائے کی جانب سے مریضہ کو موبائل نمبر دینے کا معاملہ،ایمرجنسی وارڈ میں شدید ہنگامہ آرائی،ہسپتال انتظامیہ کی واقعہ چھپانے کی کوشش،اسسٹنٹ کمشنر کا فوری نوٹس،رپورٹ طلب کرلی گئی۔سی ای او ہیلتھ موقف دینے سے گریزاں۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق ٹی ایچ کیو اٹھارہ ہزاری میں خواتین مریضوں کے ساتھ بدتمیزی اور ہراساں کرنے کے واقعات میں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے گزشتہ روز ٹی ایچ کیو کے ایمرجنسی وارڈ میں حاکم نامی وارڈ بوائے نے ناہید نامی مریضہ کو لگی ڈرپ اتارنے کے بہانے اپنا موبائل نمبر دیا جس پر مذکورہ لڑکی نے اپنی ماں کو بتایا مریضہ کی ماں نے اس غیراخلاقی حرکت پر احتجاج کرتے ہوئے شدید ہنگامہ آرائی کی اور مذکورہ وارڈ بوائے کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جس پر ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے منت سماجت کرکے معاملہ دبانے کی کوشش کی گئی مگر اسسٹنٹ کمشنر اٹھارہ ہزاری شبیر احمدڈوگر نے علم ہونے پر معاملہ کا فوری نوٹس لیتے ہوئے رپورٹ طلب کرلی اس حوالے سے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر شبیراحمد ڈوگر نے بتایا کہ معاملہ کی شفاف انکوائری کی جائے گی اور ملوث عملہ کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی انکا کہنا تھا کہ قبل ازیں اس طرح کی غیراخلاقی حرکات کرنے کی پاداش میں ایک سیکیورٹی گارڈ کو نوکری سے فارغ کیا جاچکا ہے ملزم کے ساتھ کسی قسم کی رعائیت نہیں برتی جائے گی دوسری جانب سی ای او ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر مہاراختر خاں بلوچ سے بار بار رابطہ کرنے کے باوجود موقف لینے کی کوشش کامیاب نہ ہوسکی۔

متعلقہ عنوان :