لاہور ہائیکورٹ کا عام انتخابات سے قبل سیاسی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواست پر الیکشن کمیشن سے جواب طلب

پیر مئی 21:20

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 مئی2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے عام انتخابات سے قبل سیاسی حلقہ بندیوں کے خلاف درخواست پر الیکشن کمیشن کو آف پاکستان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا ہے ۔

(جاری ہے)

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے شوکت حسین خان سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت کی درخواست گزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ حلقہ بندیوں سے قبل امیدوروں سے اعتراضات لینا اور اور انکا موقف سننا ضروری ہے جبکہ رواں سال عام انتخابات میں ہونے جا رہے ہیں لیکن عام انتخابات سے قبل جو حلقہ بندیاں کی گی ہیں وہ سیاسی بنیادوں پر ہیں،درخواست گزار درخواست وکیل نے اعتراض اٹھایا کہ حکومتی رکن صوبائی و قومی اسمبلی کی ایما پر حلقہ بندیاں کی گی ہیں مخالف امیدوروں سے اعتراضات اور ان کو نہیں سنا جا رہا ہے درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ سیاسی بنیادوں پر کی گی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دے کر قانون کے مطابق نئی حلقہ بندیاں کرنے کا حکم دے عدالت نے الیکشن کمیشن آف پاکستان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر جواب داخل کروانے کی ہدایت کر دی ہے۔