حکمران اور سیاست دان آپس میں مل کر ملک میں جاری پانی کے بحران کا مسئلہ حل کریں ،میر امان اللہ خان زرکزئی

پیر مئی 22:59

گنداخہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 مئی2018ء) نوابزادہ میر امان اللہ خان زرکزئی نے کہا ہے کہ حکمران اور سیاست دان آپس میں مل کر ملک میں جاری پانی کے بحران کا مسئلہ حل کریں کیونکہ دن بدن قلت آب کا مسئلہ شدت اختیار کرتا جارہاہے لیکن سیاستدان اور حمکران کو اپنا اقتدار بچانے کے لئے رات دن کوششوں میں مصروف عمل ہیں۔یہ بات نوابزادہ میر امان اللہ خان زرکزئی نے ٹیلی فون پر گنداخہ پریس کلب ضلع جعفرآباد کے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہی ۔

انہوں نے مذید کہا کہ اس وقت دنیا میں انسان جانور اور معشیت کا دارومدآر پانی پر منحصر ہے کیونکہ اگر ملک میں پانی کے بحران کا حل نہ نکالا گیا تواس کے نتائج انتہائی خطرناک پڑیں گے ۔

(جاری ہے)

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ پٹ فیڈر کنال سے ایک منصوبے کے تحت کوئیٹہ کو پانی کی سپلائی کا منصوبہ زیر غور ہے مگر یہ منصوبہ میری نظر میں ناکام نظر آرہا ہے کیونکہ بولان میں ٹرین بسوں پر مختلف اوقات میں ناخوشگوار واقعے ہوتے رہتے ہیں تو پانی کی پائپ لائن کیسے محفوظ ہوسکتی ہے ،اگر ہمارے حکمرانوں نے پٹ فیڈر کینال سے کوئٹہ تک پانی پہنچادیا تو پھر یہ بھی ماہرین سے امید ہے کہ پٹ فیڈر کا پانی چاند تک پہنچائیں گے انہوں نے کہا کہ مجھے یہ خبر پڑھ کر خوشی ہوئی ہے کہ چیف جسٹس پاکستان نے پانی کے مسئلے کا ازخود نوٹس لیا ہے اور بلوچستان حکومت کو حکم دیا ہے کہ پانی کی فراہمی کے بارے میں جلد رپوٹ دینے کی ہدایت کی ہے لہذا میری حکومت اور سیاستدانوں سے اپیل ہے کہ آپس کی رنجشیں دور کر کے اس پانی کے اہم مسئلے پر توجہ دیں۔