بیٹے کے قاتل کو آگ سے بھی سخت سزا دے جائے،عراقی پائلٹ کے والد کامطالبہ

خوشی ہے معاذکا داعشی قاتل پکڑا گیا، اسے ایسی سزا دی جائے جو آگ سے بھی زیادہ سخت ہو،گفتگو

منگل مئی 12:00

عمان (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مئی2018ء) داعش کے ہاتھوں زندہ جلائے گئے اردنی ہوا باز معاذ الکساسبہ کے والد ابو جواد الکساسبہ نے قاتل کے پکڑے جانے کے بعد کہا ہے کہ انہیں توقع ہے کہ میرے بیٹے کے قاتل کو آگ میں جلائے جانے سے زیادہ سخت اور عبرت ناک سزا دی جائے گی۔عرب ٹی وی کے مطابق ابو جواد الکساسبہ نے کہا کہ اسے خوشی ہے معاذ کا قاتل پکڑا گیا ہے۔

اب اسے سزا سے بچنا نہیں چاہیے۔ اسے ایسی عبرت ناک سزا دی جائے تاکہ پوری دنیا اسے دیکھے۔خیال رہے کہ داعش نے تین سال قبل اردن کا ایک جہاز شام میں مار گرانے کے بعد اس کے پائلٹ معاذ الکساسبہ کو گرفتار کر لیا تھا۔ بعد ازاں اسے ایک پنجرے میں بند کر کے آگ لگا دی گئی۔ اسے موت کے گھاٹ اتارے جانے کیمناظر ویڈیوز اور تصاویر کی شکل میں انٹرنیٹ پر پوسٹ کر کے خوف وہراس پھیلانے کی بھی کوشش کی گئی تھی۔

(جاری ہے)

جب مقتول پائلٹ کے والد سے پوچھا گیا کہ اگر آپ کو معاذ کے قاتل سے ملاقات کا موقع ملے تو آپ اس سے کیا کہیں گی اس پر ابو جواد الکساسبہ نے کہا کہ آپ ایک ایسے دکھی باپ کے بارے میں کیا خیال کرتے ہیں جس کے جواں سال بیٹے کو ایسی بے رحمانہ سزا دی گئی جس نے پوری دنیا کو ہلاک کر رکھ دیا تھا۔مقتول پائلٹ کے والد نے توقع ظاہر کی کہ داعش اپنی انجام کو پہنچنے والی ہے تاہم اسے توقع نہیں کہ وہ بیٹے کے قاتل سے مل سکیں گے۔انہوں نے عراقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ معاذ الکساسبہ کے قاتل کو سخت سے سخت سزا دے۔ اسے ایسی سزا دی جائے جو آگ سے بھی زیادہ سخت ہو۔