القدس میں امریکی سفارتخانے کی منتقلی سے عدم استحکام پیداہوگا،ترجمان فلسطینی صدر

اس اقدام کے بعد امریکا اب مشرقِ وسطیٰ میں امن عمل میں ثالث کار کا کردار ادا کرنے کے قابل نہیں رہا ،بیان

منگل مئی 12:00

مقبوضہ بیت المقدس(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مئی2018ء) فلسطینی صدر محمود عباس کے ترجمان نے کہا ہے کہ یروشلم ( مقبوضہ بیت المقدس ) میں امریکی سفارت خانہ کھلنے سے خطے میں عدم استحکام پیدا ہوگا اور تشدد آمیز واقعات کو مہمیز ملے گی،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق گزشتہ روز فلسطینی صدر محمود عباس کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ یروشلم ( مقبوضہ بیت المقدس ) میں امریکی سفارت خانہ کھلنے سے خطے میں عدم استحکام پیدا ہوگا اور تشدد آمیز واقعات کو مہمیز ملے گی۔

(جاری ہے)

ترجمان نے کہا کہ اس اقدام کے بعد امریکا اب مشرقِ وسطیٰ میں امن عمل میں ثالث کار کا کردار ادا کرنے کے قابل نہیں رہا ہے۔

متعلقہ عنوان :