سندھ ہائی کورٹ نے سانحہ پی کے 661 کی تحقیقات اور سول ایوی ایشن کے خلاف دائر درخواست سماعت کے لئے منظور کرلی

منگل مئی 18:09

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مئی2018ء) سندھ ہائی کورٹ نے سانحہ پی کے 661 کی تحقیقات اور سول ایوی ایشن کے خلاف دائر درخواست سماعت کے لئے منظور کرلی، عدالت نے معاملے پرسول ایوی ایشن اور دیگر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔منگل کو سندھ ہائی کورٹ نے درخواست گزار اقبال کاظمی کی جانب سے سانحہ پی کے 661 کی تحقیقات اور سول ایوی ایشن کے خلاف دائر درخواست سماعت کے لئے منظور کرلی۔

۔۔عدالت میں دائر درخواست میں درخواست گزار اقبال کاظمی کی جانب سے موقف اپنایا گیا کہ 7 دسمبر 2016 کو پی آئی اے کا طیارہ چترال سے راولپنڈی آتے ہوئے دوران پرواز فنی خرابی کے باعث حادثے کا شکار ہوا جس کے نتیجے میں معروف نعت خواں جیند جمشید سمیت 40 افراد جاں بحق ہوئے،درخواست میں مزید کہا گیا کہ اے ٹی آر طیاروں کے انجن بند ہونے کے باعث اب تک 20 سے زائد حادثات رونما ہوچکے ہیں۔

(جاری ہے)

2005 میں ہی اے ٹی آر طیاروں میں تکینیکی خرابی کا انکشاف ہوا انکشافات کے باوجود خرابیوں کو دور نہیں کیا گیا ۔درخواست میں 7 دسمبر کو پیش آنے والے واقعے کے زمہ داروں کے خلاف کارروائی اور پی آئی اے کے طیاروِ کی بین الاقوامی اداروں سے انسپکشن کرانے کی استدعا کی گئی تھی۔۔۔عدالت نے دائر درخواست پر 15 جون کے نوٹس جاری کرتے ہوئے سول ایوی ایشن اور دیگر سے جواب طلب کرلیا۔