ن لیگی رکن قومی اسمبلی طاہر بشیر چیمہ کا اقامہ ہائیکورٹ میں چیلنج

منگل مئی 19:37

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مئی2018ء) نواز شریف اور خواجہ آصف کی نااہلی کے بعد اب مسلم لیگ (ن) کے رکن قومی اسمبلی طاہر بشیر چیمہ کا اقامہ ہائیکورٹ میں چیلنج کردیاگیا،،سماعت اسلام آباد ہائیکورٹ کے ڈویڑن بنچ پر مشتمل جسٹس عامر فاروق اور محسن اختر کیانی نے کی،درخواست گزار محمد اکرم شاہ کی جانب سے سرور چوہدری اور رائس عبدالواحد ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے، عدالت نے طاہر بشیر چیمہ، سیکرٹری الیکشن کمیشن،، سیکرٹری قومی، اسپیکر قومی اسمبلی،، نیب، ڈی جی ایف آئی اے اور چیرمین ایف بی آر کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔

سرور چوہدری ایڈووکیٹ نے کہا کہ رکن قومی اسمبلی طاہر بشیر چیمہ نے اقامہ گوشوارے میں ظاہر نہیں کیا جبکہ رئس عبدالواحد ایڈووکیٹ کا کہنا ہے کہ طاہر بشیر چیمہ آرٹیکل 62 ون ایف پر پورا نہیں اترتے۔

(جاری ہے)

سرور چوہدری ایڈووکیٹ نے کہا کہ طاہر بشیر چیمہ کے خلاف یو اے ای میں مختلف مقدمات درج ہیں، ان کے خلاف یو اے ای میں وارنٹ گرفتاری جاری ہیں جبکہ ان کی ایک آف شور کمپنی ہے۔

سرور چوہدری ایڈووکیٹ نے مزید کہا کہ طاہر بشیر منی لانڈرنگ اور کرپٹ پریکٹس کے مرتکب ہوئے ہیں جبکہ وہ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کے رکن بھی ہیں اور ان کے خلاف نیب میں کیسز التو کا شکار ہیں،طاہر بشیر اپنی اثر رسوخ کی وجہ سے کیسز پر اثرانداز ہے۔انہوں نے اسلام ہائیکورٹ سے مطالبہ کیا کہ وہ طاہر بشیر چیمہ کی نااہلی کے لئے الیکشن کمیشن کو ہدایت جاری کری۔