انتخابات میں (ن) کی ٹکٹ کے خواہشمند امیدواروں سے درخواستوں کی وصولی کا سلسلہ شروع

قیادت پر اعتماد کا حلف نامہ ،ٹکٹ ملنے یانہ ملنے کی صورت میں پارٹی ڈسپلن کا پابند رہنے کی تحریری یقین دہانی بھی کرانا ہو گی،بحالی جمہوریت کے لئے جدوجہد کے حوالے سے بھی تفصیلات مانگی گئی ہیں،درخواستیں 25مئی تک وصول کی جائیں گی

منگل مئی 23:34

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مئی2018ء) آئندہ عام انتخابات میں مسلم لیگ (ن) کی ٹکٹ کے خواہشمند امیدواروں سے درخواستوں کی وصولی کا سلسلہ شروع کر دیا گیا جو 25مئی تک جاری رہے گا،درخواستوں کے ساتھ پارٹی قیادت پر اعتماد کا حلف نامہ اور ٹکٹ ملنے یانہ ملنے دونوں صورتوں میں پارٹی ڈسپلن کا پابند رہنے کی تحریر ی یقین دہانی بھی کرانا ہو گی جبکہ بحالی جمہوریت کیلئے جدوجہد کے حوالے سے بھی تفصیلات مانگی گئی ہیں۔

مسلم لیگ (ن) کی جانب سے قومی اسمبلی کی جنرل نشست کیلئے درخواست کیساتھ 50ہزار ،،صوبائی اسمبلی کی جنرل نشست کیلئی30ہزار روپے جبکہ قومی اسمبلی کی مخصوص نشست کیلئے ایک لاکھ جبکہ صوبائی اسمبلی کی مخصوص نشست کیلئے 75ہزار روپے فیس مقرر کی گئی جو بینک ڈرافٹ کی صورت میں جمع کرانا ہو گی ہے۔

(جاری ہے)

فارم میں درخواست گزار سے ذاتی معلومات کے ساتھ پارٹی سے وابستگی ، موجودہ عہدہ دیگر جماعتوں سے وابستگی ،سیاسی و سماجی خدمات،بحالی جمہوریت کیلئے خدمات،اگر گزشتہ انتخابات میں حصہ لیا ہے تو حاصل ووٹوں کی تعداد اور پوزیشن،جس حلقے کیلئے درخواست دی جارہی ہے اس حلقے بارے تجزیہ اور پوزیشن بارے تحریر کرنا ہوگا۔

فارم میں مسلم لیگ (ن) کے قائد محمد نواز شریف،، صدر محمد شہباز شریف کی قیادت پر اعتماد کے اظہار کا اقرار نامہ ، ٹکٹ ملنے یا نہ ملنے دونوں صورتوں میں پارٹی ڈسپلن کا پابند رہنے اور آرٹیکل 62،63 پر پورا اترنے بارے اقرار نامہ کے حصے کو پر کرنا ہوگا۔