ایل او سی کے دونوں اطراف بھارتی جارحیت اور جنگی جنون

علاقائی امن کیلئے خطر ناک ہے ، برجیس طاہر یہ کسی بڑے سانحے کا پیش خیمہ بن سکتا ،بھارت کی کشمیریوں کی نسل کشی کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کی ڈیمو گرافی تبدیل کرنے کی کارروائی کامیاب نہیں ہو گی ، مقبوضہ کشمیر میں بھارت ظلم و تشدد کے تمام حربے آزما رہا ہے،کشمیریوں کی حق خودارادیت کو کچلنے کے لئے جس درندگی کا مظاہرہ کر رہا ہے اُس کی کوئی مثال نہیں ملتی وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان کی آزاد جموں و کشمیر کے سینئر وزیر سے ملاقات میں گفتگو

منگل مئی 23:41

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 مئی2018ء) وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری محمد برجیس طاہر نے کہا ہے کہ بھارت کشمیریوں کی نسل کشی کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کی ڈیمو گرافی تبدیل کرنے کیلئے جو منظم کارروائی کر رہا ہے اُس میں اُسے ناکامی کا سامنا کرنا پڑے گا، مقبوضہ کشمیر میں بھارت ظلم و تشدد کے تمام حربے آزما رہا ہے،کشمیریوں کی حق خودارادیت کو کچلنے کے لئے جس درندگی کا مظاہرہ کر رہا ہے اُس کی کوئی مثال نہیں ملتی، ایل او سی کے دونوں اطراف بھارت کی جارحیت اور جنگی جنون علاقائی امن کے لئے انتہائی خطر ناک ہے جو کسی بڑے سانحے کا پیش خیمہ بن سکتا ۔

منگل کو آزاد جموں و کشمیرحکومت کے سینئر وزیر چو ہدری طارق فاروق نے اسلام آباد میں وفاقی وزیر امور کشمیر چوہدری محمد برجیس طاہر سے ملاقات کی، ملاقات میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے حالیہ پر تشدد کارروائیوں سے پیدا ہونے والی صورت حال ،علاقائی امن اور آزاد کشمیر میں ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے بات چیت کی گئی۔

(جاری ہے)

وفاقی وزیر نے بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں جعلی پولیس مقابلوں میں نہتے کشمیری نوجوانوں کو شہید کرنے کے بڑھتے ہوئے واقعات کی شدید الفاط میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کشمیریوں کی نسل کشی کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کی ڈیمو گرافی تبدیل کرنے کے لئے جو منظم کارروائی کر رہا ہے اُس میں اُسے ناکامی کا سامنا کرنا پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت ظلم و تشدد کے تمام حربے آزما رہا ہے اور کشمیریوں کی حق خودارادیت کو کچلنے کے لئے جس درندگی کا مظاہرہ کر رہا ہے اُس کی کوئی مثال نہیں ملتی۔انہوں نے کہا کہ ایل او سی کے دونوں اطراف بھارت کی جارحیت اور جنگی جنون علاقائی امن کے لئے انتہائی خطر ناک ہے جو کسی بڑے سانحے کا پیش خیمہ بن سکتا ہے۔ملاقات میں آزاد کشمیر کے سینئر وزیر نے پاکستان کی حکومت اور عوام کی جانب سے کشمیریوں کے ساتھ بھر پور یکجہتی پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ایل او سی کے دونوں اطراف کشمیری بھارت کے ظلم و تشدد اور جارحیت کا بڑے حوصلے اور عزم سے مقابلہ کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کو یہ سمجھ لینا چاہیے کہ وہ اپنے تمام حربوں کے باوجود نہ تو پچھلے ستر سال میں کشمیریوں کو حق خودارادیت کے پیدائشی حق سے دستبردار کروا سکا ہے اور نہ ہی آئندہ آنے والے وقت میں وہ اس حق کے حصول میں کشمیریوں کے اس عزم میں کمی لا سکے گا ۔آزادکشمیر میں جاری ترقیاتی منصوبوں سے متعلق بات چیت کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ نوازشریف کی قیادت میں مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے آزادکشمیر کے وسائل میں بے پناہ اضافہ کیا ہے۔

انہوںنے کہاکہ نہ صرف آزادکشمیر کا ترقیاتی بجٹ اس عرصے میں دوگنا کیا گیا بلکہ اس سال کے بجٹ میں بھی آزادکشمیر کے لیے ترقیاتی فنڈز میں مزید اضافہ کیا گیا ہے اور پی ایس ڈی پی کے منصوبوں کے تحت بھی آزادکشمیر میں اربوں روپے کے وسائل خرچ کیے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ نوازشریف کی کوششوں سے آزادکشمیر کو وسائل کی فراہمی سے آزادکشمیر میں ترقی وخوشحالی کے ایک نئے دور کا آغاز ہو چکا ہے اور ان وسائل کے بہترین استعمال سے آزادکشمیر کو پاکستان کا خوشحال ترین خطہ بنایا جاسکتا ہے۔

اس موقع پر چوہدری طارق فاروق نے محمدنوازشریف کی آزادکشمیر سے خلوص پر اُن کا شکریہ ادا کیا اور کہاکہ آزادکشمیر کے عوام بھی محمدنوازشریف سے بے پناہ محبت کرتے ہیں انہوںنے کہاکہ وسائل کی فراہمی کے حوالے سے جو فراخدلی مسلم لیگ (ن) کی وفاقی حکومت نے دکھائی ہے وہ پچھلے ستر سالوں میں کسی سیاسی جماعت نے نہیں دکھائی ،،نوازشریف اور مسلم لیگ (ن) کی ان مخلصانہ اور عوام دوست پالیسیز کی وجہ سے آزادکشمیر بھی دیگر علاقوںکی طرح مسلم لیگ(ن) کا گڑھ بن چکا ہے ۔

انہوں نے وفاقی وزیر اُمور کشمیر کی آزادکشمیر کی تعمیر وترقی میں دلچسپی پر اُن کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اُن کے پانچ سالہ دور حکومت میں آزادکشمیر کے عوام کو بے پناہ وسائل سے نوازا گیا ہے اور آزادکشمیر کی عوام اُن کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔