چین اور بنگلہ دیش کے درمیان جہاز رانی کے شعبے میں تعاون کا فروغ

بنگلہ دیش چین سے دو سامان بردار جہاز اور تین ٹینکرز خریدے گا ، پہلا سامان بردار جہاز13جولائی تک بنگلہ دیش کی بندر گاہ پر پہنچ جائے گا ،چین بنگالی جہاز راں کمپنی کو اٹھارہ کروڑ پینتالیس لاکھ امریکی ڈالرز کا قرضہ دے گا

بدھ مئی 21:40

ڈھاکہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) بنگلہ دیش چین سے دو سامان بردار جہاز اور تین ٹینکرز خریدے گا ، پہلا سامان بردار جہاز تیرہ جولائی تک بنگلہ دیش کی بندر گاہ پر پہنچ جائے گا ،،چین بنگالی جہاز راں کمپنی کو اٹھارہ کروڑ پینتالیس لاکھ امریکی ڈالرز کا قرضہ دے گا ۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق بنگلہ دیش کے وزیر جہاز رانی شجاعت خان نے انٹرویو میں کہا کہ بنگلہ دیش جہاز رانی کی ترقی اور اپنے لئے جدید جہازوں کی خریداری کیلئے چین کے ساتھ نئے معاہدوں پر دستخط کرے گا ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا چینی صدر مملکت شی جن پ نگ کے چودہ اکتوبر دو ہزار سولہ کو دورہ بنگلہ دیش کے موقع پر انہوں نے بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ کے ہمراہ چین اور بنگلہ دیش کی دو کمپنیوں کے درمیان قرضوں کے حوالے سے ایک معاہدے پر دستخط کی تقریب میں شرکت کی ۔ اس معاہدے کے مطابق چین کا درآمدی و برآمدی بینک رعایتی قرضوں کی مد میں بنگالی جہاز راں کمپنی کو اٹھارہ کروڑ پینتالیس لاکھ امریکی ڈالرز کا قرضہ دے گا ۔ انہوں نے کہا بنگلہ دیش چین سے دو سامان بردار جہاز اور تین ٹینکرز خریدے گا ۔ پہلا سامان بردار جہاز تیرہ جولائی تک بنگلہ دیش کی بندر گاہ پر پہنچ جائے گا ۔