حیدر آباد،دفاع پاکستان کا نواز شریف کے متنازع بیان کیخلاف گاڑی کھاتہ چوک سے لیکر پریس کلب تک زبردست احتجاجی مظاہرہ

جس میں دفاع پاکستان کی جماعتیں اور وکلاء، طلباء، تاجروں اور دیگر شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی،شرکاء کی جانب سے مودی کا جو یار ہے غدار ہے، غدار ہے‘کے زور دار نعرے لگائے جاتے رہے

بدھ مئی 21:23

حیدر آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) دفاع پاکستان کے تحت سابق وزیر اعظم نواز شریف کی طرف سے ممبئی حملوں کے حوالہ سے متنازع بیان کیخلاف گاڑی کھاتہ چوک سے لیکر پریس کلب تک زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں دفاع پاکستان کی جماعتیں اور وکلاء، طلباء، تاجروں اور دیگر شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

اس موقع پرشرکاء کی جانب سے مودی کا جو یار ہے غدار ہے، غدار ہے‘کے زور دار نعرے لگائے جاتے رہے۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں کتبے اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر نواز شریف کی متنازعہ بیان بازی اور اسرائیل کے خلاف تحریریں درج تھیں۔ احتجاجی مظاہرہ سے محمد عابد رہنما ملی مسلم لیگ اور دفاع پاکستان کے مقامی رہنما عبدالواحد سواتی ، محمد خالد سیف ودیگر نے خطاب کیا۔

(جاری ہے)

مقررین نے اپنے خطابات میں کہاکہ میاں نوازشریف مودی سرکار کی کٹھ پتلی بنے ہوئے ہیں اور انڈیا کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں۔ ممبئی حملوں سے متعلق متنازع بیان بازی پاکستان پر بین الاقوامی پابندیاں لگوانے کی سازشوں کا حصہ ہے۔نے اسرائیلی فوج کی طرف سے غزہ میں بیسیوں مسلمانوں کو شہید اور سینکڑوں زخمی کئے جانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ نہتے فلسطینیوں کی شہادت پر بین الاقوامی دنیا کی خاموشی افسوسناک ہے۔

اپنے بیان میں انہوںنے کہاکہ غاصب اسرائیل فلسطین میں نصف صدی سے زائد عرصہ سے بے گناہ مسلمانوں کو ظلم و بربریت کا نشانہ بنا رہا ہے۔۔امریکہ کی طرف سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت قرار دے کر دنیا کا امن برباد کرنے کی کوشش کی گئی۔۔غزہ میں احتجاج کرنے والوں پر گولیاں برسانا بدترین دہشت گردی ہے۔ انہوںنے کہاکہ بیت المقدس مسلمانوں کا قبلہ اول ہے۔

وہ اس کے تحفظ سے کسی صورت پیچھے نہیں رہیں گے۔تحفظ بیت المقدس کیلئے مسلم ممالک کو باہم متحد ہو کر پالیسیاں ترتیب دینا ہوں گی۔ان کیخلاف بغاوت کا مقدمہ چلایا جائے ۔سابق وزیر اعظم نواز شریف اپنی غلطی تسلیم کرنے کی بجائے گمراہ کن بیان کے دفاع میں مصروف ہیں۔ بھارتی خوشنودی کیلئے اس قسم کے انٹرویو دے کر دشمن کے ہاتھ مضبوط کئے جارہے ہیں۔

محض ذاتی مفادات کیلئے ملکی سلامتی کونقصان پہنچانے کی سازشیں قوم کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دے گی۔ انہوںنے کہاکہ میاں نواز شریف اور ان کے حواری بھارت و امریکہ اسرائیل کو خوش کرنے کیلئے وطن عزیز پاکستان کی جڑیں کھوکھلی کر رہے ہیں۔ پاک فوج نے دہشت گردی کے خاتمہ کیلئے بے پناہ قربانیاں پیش کی ہیں۔ انڈیا اور اس کے اتحادی پاکستانی فوج اوردفاعی اداروں کو کمزور کرنا چاہتے ہیں۔

نواز شریف اس مقصد کیلئے انڈیا کے ہاتھوں استعمال ہو رہے ہیں اور وہی زبان بول رہے ہیں جو نریندر مودی انڈیا میں بولتا ہے۔ مقررین نے کہاکہ نواز شریف نے ممبئی حملوں سے متعلق گمراہ کن بیان بازی سے پاکستان کیلئے مشکلات کھڑی کرنے کی کوشش کی ۔ انہیںکشمیر اورفلسطیں میں بہتے ہوئے لہو کی کوئی پرواہ نہیں۔ کلبھوشن جیسے دہشت گردوں کی کاروائیوں پر حکمرانوں کی زبانیں خاموش ہیں لیکن کشمیریوں اور فلسطین کے حقوق کیلئے آواز بلند کرنیو الوں کیخلاف دہشت گردی کا پروپیگنڈہ کیا جارہا ہے۔

انہوںنے کہاکہ انڈیا افغانستان میں ٹریننگ سنٹر قائم کر کے پاکستان میں دہشت گردی کی آگ بھڑکا رہا ہے۔ پاکستان کیخلاف سازشوں کے توڑ کیلئے قوم کا ہر فرد افواج پاکستان کے ساتھ ہے۔ اس وقت پوری قوم افواج پاکستان کے ساتھ ہے اور پختہ عزم رکھتی ہے کہ خطرات کے اس دور میں اپنی افواج کے شانہ بشانہ کھڑے ہوکر دفاع وطن کے تقاضوں کو پورا کیا جائے گا۔ ووٹ کی عزت مانگنے والے ملک کو عزت دیں۔ جو قوم ووٹ کے ذریعے تمھیں تین بار وزیر اعظم بنا سکتی ہے وہ قوم ہرگز تمہاری غداری کو برداشت نہیں کرے گی۔