ماہ رمضان کی آمد سے قبل ہی اشیاء خوردوںنوش میں اضافہ تقدس اور اسلامی تعلیمات کی نفی ہے،نعیم حشمت

بدھ مئی 23:36

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) مہاجر قومی موومنٹ ((پاکستان ) کے سینئررہنما نعیم حشمت نے کہا کہ ماہ رمضان کی آمد سے قبل ہی اشیاء خوردوںنوش میںہونے والا اضافہ نا صرف ماہ رمضان کے تقدس اور اسلامی تعلیمات کی نفی ہے بلکہ ماہ رمضان کی فضیلت اور افادیت کو دنیا کے آگے تماشہ بنانے کے مترادف ہے،جسکی کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد ہوتی ہے۔

نعیم حشمت نے کہا کہ ماہ رمضان کے حوالے سے حکومت کی جانب سے نا تومہنگائی کے قابو کیلئے کوئی حکمت عملی واضح کی گئی ہے اور ناہی سیکورٹی کے حوالے سے کوئی اقدامات دکھائی دے رہے ہیں ،جبکہ شدید گرمی طویل لوڈشیڈنگ اور پانی کی بندش نے شہریوں کا برا حال کیا ہوا ہے ،جسے دیکھ کر محسوس ہورہا ہے کہ اس رمضان بھی شہریوں نے بنا بجلی کے ہی سحر و افطار کرنا ہے۔

(جاری ہے)

نعیم حشمت نے لیاقت آباد زون کے دورے کے موقع پر بزرگوں اور زونل ذمہ داران کے وفد سے ملاقات کی اور کہا کہ حکومت کی جانب سے ہر سال سحرو افطار کے اوقات میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے کے بلند و بانگ دعوے اور وعدے کئے جاتے رہے ہیں ،جو ہمیشہ بیانات کی حد تک ہی رہے ہیں اس بار بھی حالات کچھ مختلف نہیں بلکہ مزید پریشان کن دکھائی دے رہے ہیں جسکی وجہ حکومتی کرپشن ،آپسی رسہ کشی اورنااہل افراد کا عوامی اداروں اور سیٹوں پر براجمان ہونا ہے۔

نعیم حشمت نے کہا کہ دنیابھر میں ماہ رمضان کے مہینے میںحکومت کی جانب سے عوام کومختلف سہولیات اور قیمتوں میں نمایاں کمی اور سبسڈی دی جاتی ہے،لیکن ہمارے ملک کی بدقسمتی جہاںعوامی نمائندے عوامی خدمت کے جزبے سے محروم ذاتی مفادات مال ودولت جمع کرنے کے غرض سے اپنی اصل ذمہ داری کو بھولے ہوئے ہیں،جبکہ وہ حکمران جنکی ذمہ داری عوام کی خدمت اور انہیں مسائل سے نجات کیلئے حکمت عملی مرتب دینا چاہیے ایسے بے حس کاروباری اور بزنس مین بنے ہوئے ہے جنکا ہر عمل فائدے کیلئے کیا جاتا ہے۔#