دل میں اگر اللہ کو جواب دہی کاخوف ہو تو حکمرانوں کی نیندیں بھی خلفائے راشدین کی طرح اڑجانا چاہیئے،پی ایس پی اراکین اسمبلی

بدھ مئی 23:29

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) پاک سرزمین پارٹی کے ارکان اسمبلی بلقیس مختار محمد دلاور اور عبداللہ شیخ نے اپنی بجٹ تقریر میں سندھ حکومت کارکردگی کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ھوئے کہا کہ حکومت ہر شعبہ میں عوام کو ریلیف دینے میں ناکام ھوگئی ھے اقتدار کانٹوں کی سیج ھوتاھے اللہ کو جواب دہی کے خوف سے خلفائے راشدین کی نیندیں اُڑا جاتی تھی اگر ہم بحثیت ممبر اسمبلی عوام کو ریلیف دینے ناکام ھوکر یم نے اپنے منصب سے وفانہیں کی رمضان المبارک کی آمد ھے ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں روزہ داروں کو ریلیف دے رمضان میں لوڈشیڈنگ ختم اور، اشیائخوردونوش کی قیمتوں میں نمایاں طور پر کمی کرے۔

(جاری ہے)

، بجٹ پر آظہار خیال کرتے ھوئے اراکین کا کہنا تھاکہ اگر عوام تک بجٹ کے ثمرت نہ پہنچے تو بجٹ صرف الفاظ اور اعدادا شمار کا پلندہ ھوتا حکومت پچھلے بجٹ میں عوام کو ریلیف دینے اور اپنے احداف حاصل کرنے میں بلکل ناکام ھے اسکے باوجود نئے مالی سال کے بجٹ کی تیاری میں اپوزیشن سے مشاروت نہیں کی گئی اور بجٹ پیش کرنے بعد سے وزیراعلیٰ اور وزرائایون سے غائب ھوگئے ہیں اپوزیشن اراکین اعداد شمار جمع کرکے ایک جامع تنقیدی تقریر تیار کرتے ہیں لیکناپوزیشن کو سننے کے لئے متعلقہ محکمہ جات کے حکومتی وزراء ایوان میں موجود نہیں ہیں اب یہ روایت تبدیل ھونا چاہیئے اور بجٹ کی تیاری کے دوران اپوزیش سے بھی مشاورت کرنی چاہیئیارکان نے کہاکہ مصطفی کمال اور انیس قائم خانی کی قیادت، میں پاک سرزمین پارٹی آئندہ الیکشن کامیابی حاصل کرکے سندھ میں حقیقی معنوں میں جمہوریت قائم کریگی اور عوام کو زندگی کی بنیادی سہولیات کی فراہمی ہماری حکومت کی اولین ترجیع ھوگی اجلاس کے دوران پی ایس پی ارکان اسمبلی نے صحافیوں کے کمشنر کراچی کے خلاف احتجاج میں شرکت کرکے صحافی برادری سے اظہار یکجہی کے ساتھ انہیں پاک سرزمین پارٹی کی جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔