ضلع ناظم پشاورکابغیرنقشوں کے تعمیرات کرنیوالوں کیخلاف کارروائی نہ کرنے پراظہاربرہمی،آئی جی کو مراسلہ ارسال

بدھ مئی 23:30

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 مئی2018ء) ضلع ناظم پشاور محمد عاصم خان کی زیر صدارت بی سی اے ٹاون ون اور بی سی اے ٹاون ٹو کے الگ الگ اجلاس منعقد ہوئے جس میں بی سی اے کمیٹی کے چیئرمین ڈسٹرکٹ ممبر آصف خان ،اور ٹائون ون اور ٹو کے بی سی اے اسٹاف نے شرکت کی اجلاس میں ٹائون ون اور ٹائون ٹو کو موصول ہونے والے 34 کمرشل نقشوں پر تفصیلی غور وغوض کیا گیا جس میں قواعدوضوابط پورے ہونے پر گیارہ نقشوں کی منظور ی دید گئیں جبکہ 23نقشوں کو قواعدوضوبط پور ے نہ ہونے پر مسترد کیا گیا اجلاس میں بی سی اے کمیٹی کے چیرمین نے ضلع ناظم کے نوٹس میں لایا کہ نقشوں کے بر عکس تعمیرات کے مالکان کے خلاف کاروائی کے لیے مختلف تھانوں میں درخواستیں جمع کرائی گئی ہیں تاہم پولیس کی جانب اب تک کوئی کاروائی نہیں کی گئی جس پر ضلع ناظم نے شدید بر ہمی کا اظہار کرتے ہوئے آئی جی خیبر پختون خوا کو مراسلہ جاری کرنے بی سی اے کمیٹی کی جانب سے دئیے گئے نقشوں کے بر عکس تعمیرات کرنے والے مالکان کے خلاف فوری طور پر ایف آئی آر درج کرنے جبکہ نقشوں کے برعکس تعمیرات کو مسمار کرنے کے احکامات جاری کیں اجلاس میں ضلع ناظم پشاور محمد عاصم خان نے رمضان المبارک میں خود میدان میں نکلنے اور نقشوں کے بر عکس تعمیرات فوری مسمار کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے مسماری کے لیے خصوصی اسکواڈ تشکیل دینے کے احکامات جاری کیں اس کے علاوہ پلازوں کے تہہ خانوں کو پارکنگ کے لیے استعمال نہ کرنے والوںکے خلاف بھی کارروائی کا فیصلہ کرتے ہوئے ضلع ناظم نے فہرستیں مرتب کرنے کے احکامات جاری کیں اس کے علاوہ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کمرشل نقشوں کے ساتھ ساتھ خالی پلا ٹ کی تصاویر بھی نقشوں کے لازمی قرار دیا گیااجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ضلع ناظم پشاور محمد عاصم خان نے کہا کہ شہر میں ٹریفک کی روانی برقرار رکھنے کے لیے نقشوں کے مطابق تعمیرات انتہائی ضروری ہیں جس پر ہر صورت عمل در آمد کیا جائے گا اور اس کے لیے سخت سے سخت فیصلے کئے جائیں گے انہوں نے تنبیہ کی غفلت کا مظاہرہ کرنے والوں کے خلاف RSOکے تحت سخت کاروائی کی جائے گی ۔