2016میں ٹرمپ کے نمائندوں اورروسی وفد کی ملاقات پرمشتمل موا د جاری

ملاقات میں ہیلری کو نقصان پہنچانے بارے اطلاع فراہم کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا،سینیٹ کمیٹی برائے عدلیہ

جمعرات مئی 12:22

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء) سینیٹ کی کمیٹی برائے عدلیہ نے 2500 صفحات پر مشتمل مواد جاری کیا ہے جو جون 2016ء میں ٹرمپ کے نمائندوں اور روسیوں کے ایک گروپ کے درمیان ملاقات کے بارے میں ہے، جس میں ڈیموکریٹ صدارتی امیدوار ہیلری کلنٹن کو نقصان پہنچانے کے بارے میں اطلاع فراہم کرنے کا وعدہ کیا گیا تھا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ری پبلیکن پارٹی کی قیادت والی کمیٹی نے شہادت، رقعہ اور اطلاع کے دیگر ذرائع پر مشتمل مواد جاری کیا جو اٴْن آٹھ افراد سے اکٹھا کیا گیا جنھوں نے نیویارک میں ٹرمپ ٹاور میں ہونے والی اٴْس ملاقات میں شرکت کی تھی۔

ہیلری کو نقصان پہنچانے کے بارے میں اطلاعات ٹرمپ کے بیٹے، ڈونالڈ جونیئر؛ اور ٹرمپ کے دیگر نمائندگان کو دی جانی تھیں۔

(جاری ہے)

اس ملاقات کی چھان بین خصوصی کونسل رابرٹ مولر کر رہے ہیں، جو اس بات کی تفتیش کر رہے ہیں آیا ٹرمپ کی انتخابی مہم کا روس سے گٹھ جوڑ تھا کہ 2016ء کا صدارتی انتخاب جیتا جائے، یا ٹرمپ نے انصاف کی راہ میں روڑے اٹکائے۔متن سے اس بات کا انکشاف ہوتا ہے کہ گذشتہ سال ٹرمپ جونیئر نے عدلیہ سے متعلق کمیٹی کو بتایا تھا کہ اٴْنھیں یہ بات یاد نہیں آیا اٴْنھوں نے روس کی تفتیش سے متعلق اپنے باپ سے کوئی بات کی ہے۔

ٹرمپ جونیئر نے یہ بھی کہا کہ وہ نہیں سمجھتے کہ اس ملاقات میں کوئی نامناسب بات ہوئی تھی۔۔ٹرمپ جونیئر کے علاوہ اس ملاقات میں صدر کے داماد جیرڈ کوشنر اٴْس وقت کی انتخابی مہم کے منیجر پال مانافورٹ؛ اور روسی وکیل نتالیا ویزلنتکایا موجود تھیں۔ اجلاس میں روس امریکہ لابیئسٹ، رینات اخمنشن بھی شریک تھے، جنھوں نے عدالت کے لیے ویزلنتکایا، آئیکے کاولز، جن کا تعلق جورجیا کے سابق سویت جمہوریہ سے ہے اور وہ کاروباری شخص ہیں؛ اور برطانوی لابیئسٹ اور موسیقی کے پروموٹر، روب گولڈ سٹون، جنھوں نے اس ملاقات کے انعقاد میں مدد کی تھی۔