عالمی یوم بلندفشارخون کے سلسلے میں سیمینارکا انعقاد

جمعرات مئی 15:40

قصور۔17 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء) دل کی بیماریاں دنیابھرمیں اموات کی سب سے بڑی وجہ ہیں ‘عالمی ادارہ صحت کے اندازوں کیمطابق ہرسال ایک کروڑ 73لاکھ افراد ان بیماریوں سے مرجاتے ہیں ‘ سال2030ء تک ان بیماریوں سے ہونیوالی اموات کی تعداد 2کروڑ 30لاکھ سے زائد ہوجائے گی۔ان خیالات کا اظہارطبی ماہرین نے عالمی یوم بلندفشارخون کے سلسلے میں منعقد ہونیوالے سیمینارکے دوران کیا۔

(جاری ہے)

سیمینارمیں ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرہسپتال قصورکے ہارٹ اسپیشلسٹ ڈاکٹرغلام شبیریزدانی‘سینئرجنرل فزیشن ڈاکٹر عبدالقدوس کھوکھر‘سینئرجنرل فزیشن ڈاکٹر کیپٹن جاویدحسین‘فاضل طب الجراحت حکیم میاں لیاقت احمدعلی‘جنرل سیکرٹری طبیہ کمیٹی ضلع قصورحکیم غلام مصطفی سبحانی نے خصوصی لیکچرزدیئے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہر دوسرافرد بلڈپریشرکے مرض کا شکارہوچکاہے‘ پاکستان میں نمک کا استعمال عالمی سطح کی نسبت بہت زیادہ ہے‘ بلڈپریشرپرقابوپانے کیلئے سگریٹ نوشی ترک‘نمک ‘فاسٹ فوڈ کا استعمال کم اور ورزش کرنے کے علاوہ سبزیوں کا استعمال زیادہ بڑھائیں۔انہوں نے مزیدکہا کہ متوازن زندگی اورضر وری پرہیز کے ذریعے بلڈپریشر کے خطرات سے بچاجاسکتاہے۔

متعلقہ عنوان :